The news is by your side.

Advertisement

ویزا کے لیے منگیتر اور دوست کی شادی کرانا جائز ہے؟ امام کعبہ سے لائیو شو میں فتوی طلب

ریاض: امام کعبہ شیخ صالح الحمید سے لائیو ٹی وی شو کے دوران ایک شہری نے فتویٰ طلب کرلیا کہ اگر اپنی منگیتر کو سعودیہ عرب بلانے کے لیے اس کی شادی اپنے دوست سے کرادوں تو کیا یہ عمل جائز ہوگا؟  جس پر امام کعبہ برہم ہوگئے۔

ویب سائٹ خیلج ٹائمز کے مطابق امام کعبہ صالح الحمید سے یہ سوال سعودی عرب میں مقیم شامی شخص نے ایک براہ راست ٹیلی ویژن پروگرام کے دوران کیا۔

شامی شہری اس وقت وزٹ وزے پر سعودی عرب آیا ہوا ہے جسے اپنی منگیتر کو شام سے سعودی عرب بلانے میں قانونی پیچیدگیوں کا سامنا ہے اور ناکامی کے بعد یہ انتہائی قدم اُٹھانا چاہتا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق شامی نوجوان کا کہنا تھا کہ میرے دوست کو سعودی عرب کی شہریت حاصل ہے اور اگر میری بیوی کا کاغذی نکاح دوست سے کروالیا جائے تو وہ بآسانی سعودیہ آ سکتی ہے بعد ازاں میرا دوست بیوی کو طلاق دے گا اور میرا مسئلہ حل ہوجائے گا۔

امام کعبہ صالح الحمید نے نوجوان کے سوال پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے سائل کو شرعی قوانین سے تجاوز کرنے پر خبردار کیا اور تھوڑے سے فائدے کے لیے دین کا مذاق اڑانے سے گریز کرنے کی ہدایت کی اور نوجوان کو شرعی قانون کو غلط رو میں استعمال کرنے سے سختی کے ساتھ منع کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ یہ قدم سعودی قوانین کو چکمہ دینے کے بھی مترادف ہے جو دین الہی میں بھی دھوکا دہی کے باعث قابل گرفت ہے اور سعودی قانون کی خلاف ورزی پر بھی سزا کا حق دار ہوگا، ایسے اقدام سے باز رہا جائے، یہ اقدام دین سے کھیلنے کے مترادف ہوگا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں