The news is by your side.

Advertisement

نصرت سحر عباسی کی خودسوزی کی دھمکی

کراچی: رکن سندھ اسمبلی کا کہنا ہے کہ میں‌ صوبائی وزیر ورکس اینڈ سروسزامداد پتافی کے نازیبا رویئے پر سراپا احتجاج ہوں، ان کا کہنا تھا کہ اگر بلاول بھٹو نے صوبائی وزیر کو معطل نہیں‌ کیا تو وہ پیڑول چھڑک کراپنے آپ کو آگ لگا لیں‌ گی ، انہوں نے امداد پتافی کی معافی کی درخواست کو مسترد کرتے ہونے 2 دن کی مہلت دیدی۔

تفصیلات کے مطابق جمعے کے روزسندھ اسمبلی کے اجلاس میں صوبائی وزیر امداد پتافی نے رکن سندھ اسمبلی نصرت سحر عباسی کے ساتھ بدکلامی پرغیرمشروط معافی مانگی جسے مسلم لیگ فنکشنل کی رکن فصرت سحرعباسی نے مسترد کردیا ہے۔ وہ پٹرول کی بوتل لے کرسندھ اسمبلی میں پہنچی اورسیٹرھیوں پردھرنا دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ اگرانصاف نہ ملا تو پیٹرول چھڑک کر خود سوزی کر لوں گی۔

واضح رہے صوبائی وزیر ورکس اینڈ سروسزامداد پتافی نے سئینر وزیر اور پارلیمانی لیڈر نثار کھوڑوکےشوکازنوٹس پرتحریری وضاحت دیکر اپنے رویئے پر معافی مانگی تھی ، اس موقع پر ان کا کہنا تھا کہ مجھے سے دانستہ نہیں بلکہ ناسمجھی میں یہ غلطی سرزد ہوئی ہے، جس پرمیں غیر مشروط معافی کا طلبگار ہوں۔

یہاں پڑھیں:سندھ اسمبلی میں تلخ کلامی‘ ڈپٹی اسپیکر کوعوام کا خیال آگیا

صوبائی وزیر کے رویئے پرپیپلزپارٹی کی سینئر قیادت نے ناگواری کا اظہار کیا تھا اور انہیں فوری معذرت کرنے کا کہا تھا۔

پیپلزپارٹی کے چیرمئین بلاول بھٹو زرداری نے واقعہ کا سختی سے نوٹس لیا تھا اور صوبائی وزیر کو شوکاز جاری کردیا تھا.

یہاں پڑھیں:بلاول کی ہدایت پر امداد پتافی کو شوکاز نوٹس جاری

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں