The news is by your side.

Advertisement

جائزہ اجلاس: آئی ایم ایف کا وفد پاکستان پہنچ گیا

اسلام آباد: عالمی مالیاتی فنڈز (آئی ایم ایف) کا وفد جائزہ اجلاس کے لیے وفاقی دارالحکومت پہنچ گیا۔

ذرائع کے مطابق پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان دوسرا تین روزہ جائزہ اجلاس 3 فروری سے شروع ہوگا جو 13 فروری تک جاری رہے گا۔

ذرائع کے مطابق اجلاس میں ایف بی آر کی ٹیکس وصولیوں کے اہداف میں ناکامی بڑا چیلنج ہوگا جبکہ سرکلر ڈیٹ سمیت توانائی سیکٹر میں اصلاحات بھی ایک بڑا چیلنج ہوگا۔

ذرائع کے مطابق آئی ایم ایف کے وفدکونجکاری پروگرام پر بریفنگ دی جائے گی، بجٹ خسارے اور کرنٹ اکاونٹ خسارے پر بھی پاکستانی حکام وفد کو تفصیلی بریفنگ دیں گے جبکہ انہیں رپورٹ بھی پیش کی جائے گی۔ ذرائع کے مطابق پاکستان نے ترقیاتی فنڈز کے اجرا کے حوالے سے آئی ایم ایف کے ہدف کو بھی حاصل کرلیا ہے۔

خیال رہے پاکستان کو  آئی ایم ایف کی جانب سے اب تک ایک ارب 45 کروڑڈالر کاقرضہ مل چکا ہے۔

واضح رہے کہ 3 جولائی 2019 کو آئی ایم ایف نے پاکستان میں معاشی استحکام کے لیے تین سال کے عرصے میں 6 ارب ڈالر قرض فراہم کرنے کی منظوری دی تھی۔

پہلی قسط جاری کرنے کا اعلان کرتے ہوئے آئی ایم ایف کا کہنا تھا کہ حکومت نے ہماری مشاورت سے مالی سال کا بجٹ تیار کیا اور پارلیمنٹ سے بھی منظور کروایا تھا۔

حکومت نے یقین دہانی کروائی تھی کہ بجلی اور گیس کی مکمل لاگت صارفین سے وصول کی جائے گی اور پیٹرولیم مصنوعات پر جی ایس ٹی 17 فیصد سے کم نہیں کیا جائے گا۔

یاد رہے کہ دوسری قسط کی منظوری سے متعلق آئی ایم ایف کے تحت پاکستان کا پہلا جائزہ لینے کے بعد کہا گیا تھا کہ حکومتی پالیسیوں کے فیصلہ کن عمل سے ملک میں معاشی استحکام کو مضبوط رکھنے میں مدد ملی ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں