site
stats
پاکستان

ملک میں قرآن کا نظام نافذ کریں گے، سراج الحق

لاہور: جماعت اسلامی کے امیر سراج الحق نے کہا ہے کہ پاکستان چار صوبوں کا مجموعہ نہیں بلکہ نظریے کا نام ہے، ملکی معیشت قرآن کے مطابق نہیں موقع ملا تو ملک میں قرآن کا نظام نافذ کریں گے۔

منصورہ میں جماعت اسلامی کی جانب سے منعقدہ محفلِ حسن قرات کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سراج الحق نے کہا کہ قرآن پاک میں دنیا کے ہر شعبہ ہائے زندگی سے وابستہ افراد کے لیے رہنمائی موجود ہے مگر افسوس پاکستان جیسے اسلامی ملک میں اس کے قوانین آج تک لاگو نہیں کیے گئے۔

انہوں نے کہا کہ ہماری معیشت قرآن کے مطابق نہیں، غیر اسلامی نظام کی وجہ سے ملک غربت اور بدامنی کا شکار ہے اور اُس پر ستم ظریفی یہ ہے کہ دینی طالب علم کو دہشت گرد قرار دیا جاتا ہے۔

پڑھیں: ’’ حکمرانوں کی بد اعمالیوں اور کردار کی وجہ سے پاکستانی پریشان ہیں، سراج الحق ‘‘

سراج الحق نے کہا کہ ملک میں شراب خانے کھولنے کے یلے کسی رجسٹریشن کی ضرورت نہیں مگر مدارس کھولنے کے لیے اجازت لینا ضروری ہے، حکومت میں بیٹھے لوگوں نے ہمیشہ مدارس کے خلاف سازشیں کر کے انہیں بدنام کرنے کی کوشش کی۔

جماعت اسلامی کے امیر کا مزید کہنا تھا کہ ملک بھر کے دینی لوگوں اور جماعتوں کو اکٹھا کر یں گے اور موقع ملا تو پاکستان میں قرآن کا نظام نافذ کریں گے کیونکہ پاکستان کو مسائل سے نکالنے کے لیے شرعی تعلیمات بہت اہم ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top