The news is by your side.

Advertisement

سعودی وزارت افرادی قوت کی جانب سے ملازمین کے لیے اہم اعلان

ریاض: سعودی عرب میں قانون محنت کے لائحہ عمل میں شامل دفعہ 40 غیرمؤثر قرار دے دی گئی۔

عرب میڈیا کی رپورٹ کے مطابق سعودی وزارت افرادی قوت نے اعلان کیا ہے کہ کورونا وبا کی صورت حال کو مدنظر رکھتے ہوئے قانون محنت کے لائحہ عمل میں جس دفعہ(40) کو شامل کی گئی تھی اب وہ غیر مؤثر ہوگئی ہے۔

رپورٹ کے مطابق وزارت افرادی قوت نے یہ دفعہ کووڈ 19 کے دوران اپریل 2020 کو آجر اور اجیر کے درمیان ملازمت کے تعلق کو منظم کرنے کے لیے شامل کی تھی۔ اس دفعہ کے مخاطب کورونا وائرس سے بچاؤ کے اقدامات سے متاثرہ شعبوں اور اداروں کے تمام ملازم تھے، البتہ بعض شعبوں کو اس میں چھوٹ بھی تھی۔

قانون محنت کی دفعہ 40

اس قانونی دفعہ میں یہ سہولت دی گئی تھی کہ نئے حالات میں آجر اپنے اجیر کو ہنگامی چھٹی پر بھیج کر اس چھٹی کو سالانہ چھٹی قرار دے سکتا ہے، اس کے علاوہ اجیر کو استثنائی چھٹی پر بھی بھیجا جاسکتا ہے۔ جبکہ دفعہ 40 میں اجیر کو ملازمت کا معاہدہ ختم کرنے کا بھی حق دیا گیا تھا۔

غیرمؤثر ہونے والی دفعہ 40 میں یہ بھی کہا گیا تھا کہ اگر حکومت نے وبا کے دوران کوئی ایسا اقدام کیا جس کی وجہ سے اوقات کار محدود ہورہے ہوں تو ایسی صورت میں اجیر آجر سے معاملات طے بھی کرسکتا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں