The news is by your side.

Advertisement

حکومت کے آکسیجن کی پیدوار اور استعمال سے متعلق اہم فیصلے

اسلام آباد: وفاقی حکومت نے کورونا وبا کے پیش نظر آکسیجن کی مقامی پیدوار بڑھانے کا فیصلہ ‏کیا ہے، آکسیجن کے ممکنہ بحران سے نمٹنےکیلئے ہنگامی حکمت عملی تیار کرلی گئی ہے۔

ذرائع کے مطابق آکسیجن کی اضافی پیداوار اور ملک گیرترسیل ہنگامی پلان میں شامل ہے جب کہ ‏ضیاع روکنے کیلئے آکسیجن استعمال کی گائیڈلائنز کےاجرا کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ آکسیجن کی مقامی پیداوار میں 30 میٹرک ٹن یومیہ اضافہ کیاجائےگا، آکسیجن ‏پیداوار بڑھانے کیلئے مینوفیکچررز سے اپیل کی جائےگی اور مینوفیکچررز سےمزید آکسیجن پلانٹس ‏چلانےکی اپیل کی جائےگی۔

انڈسٹری سےآکسیجن کی ہیلتھ سیکٹر کو منتقلی کا ہنگامی پلان بھی تیار کیا گیا ہے، ہنگامی حالت ‏میں صنعتی شعبےکی بیشترآکسیجن ہیلتھ سیکٹر کو ملےگی، کم ضروری صنعتوں سےآکسیجن ہیلتھ ‏سیکٹرکومنتقل کیاجائےگا۔

ملکی پیداوار کا 80 فیصدآکسیجن ہیلتھ سیکٹر اور 20 فیصد صنعت کو مل رہا ہے، کوروناکی تیسری ‏لہرمیں آکسیجن کےاستعمال میں60فیصداضافہ ہوا ہے۔

آکسیجن کاغیرضروری استعمال روکنےکیلئےسنجیدہ اقدامات کافیصلہ کیا گیا ہے۔ صنعت،ہیلتھ ‏سسٹم کی آکسیجن کی طلب اور رسد کا سینٹرل ریکارڈ تیار ہو گا، صنعتکاروں کی مشاورت ‏سےآکسیجن بچت پلان تیارکیےجائیں گے، صنعتی شعبےمیں غیرضروری استعمال روک کرآکسیجن ‏بچت ممکن ہے۔

اسپتالوں میں آکسیجن کےاستعمال کا بچت پلان کی تیاری کا فیصلہ بھی کیا گیا ہے، اسپتالوں میں ‏طےشدہ سرجریز کے التواسےآکسیجن کی بچت ہوگی، آپریشن تھیٹرز کو آکسیجن سپلائی کمی سے ‏اسپتالوں پربوجھ کم ہوگا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں