The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب کا سیاحوں کیلئے ایک اہم منصوبہ

سعودی ماہرین آثار قدیمہ نے تاریخی مقام العلاء کے پہاڑوں کے درمیان فراموش شدہ بادشاہتوں کی باقیات کا سراغ لگانے کےلیے کھدائی شروع کردی۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق سعودی عرب کا تاریخی مقام دو ہزار سال پرانا شہر العلاء کا افتتاح 2019 میں کیا گیا تھا جس کے بعد سیاحوں کا ہجوم العلاء کی جانب کھنچا چلا آرہا ہے کیوں کہ یہاں مدائن صالح کے شاہانہ مقبرے تعمیر ہیں۔

اب ماہرین آثار قدیمہ دادان اور لحیان کی قدیم اور طویل عرصے سے فراموش شدہ بادشاہتوں کی باقیات کا پتہ لگانے کے لیے کھدائی کررہے ہیں۔

اس منصوبے کے شاہی کمیشن کے مطابق دادان کا ذکرعہد نامہ قدیم میں کیا گیا ہے اور لحیانی بادشاہت اپنے وقت کی سب سے بڑی بادشاہتوں میں سے ایک تھی جو جنوب میں مدینہ منورہ سے لے کر شمال میں جدید اردن کے علاقے عقبہ تک پھیلی ہوئی تھی۔

رپورٹ کے مطابق تقریباً 900 سال پر محیط یہ دونوں بادشاہتیں 100 عیسوی تک اہم تجارتی راستوں کو کنٹرول کرتی تھیں۔

العُلا کو ترقی دینے کا منصوبہ دراصل غیرمسلم سیاحوں کوراغب کرنے اور قومی تشخص کو مستحکم کرنے کے لیے قبل ازاسلام کے ثقافتی ورثہ اور تاریخی آثارکو محفوظ کرنے کے اقدام کا حصہ ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں