بھارتی فلم انڈسٹری میں پاکستانی اداکاروں پر پابندی برقرار:IMPPA
The news is by your side.

Advertisement

بھارتی فلم انڈسٹری میں پاکستانی اداکاروں پر پابندی برقرار

ممبئی: باصلاحیت پاکستانی اداکاروں سے خوف زدہ بھارتی سرکاری ادارے نے بالی کے دروازے پاکستانی فنکاروں کے لیے تاحال بند رکھنے کا فیصلہ کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق سرکاری ادارہ انڈین موشن پکچر پروڈیوسر ایسوسی ایشن (آئی ایم پی پی اے) نے ماضی میں پاکستانی اداکاروں کی بھارتی فلم انڈسڑی میں کام کرنے کی پابندی کے غیرمنطقی اور فن دشمن فیصلے کو برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔

بھارتیوں نے ماہرہ خان کے ساتھ ٹھیک برتاؤ نہیں کیا، ڈائریکٹر کا اعتراف

مقامی میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ’آئی ایم پی پی اے‘ کے صدر ٹی پی آگروال نے کہا کہ ہمارا ادارہ پاکستانی اداکاروں کی بھارتی فلم انڈسٹری میں کام کرنے کی سخت مخالفت کرتا ہے، ہم نہیں چاہتے کہ وہ دوبارہ بھارت آئیں اور کام کریں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ گذشتہ سال پاکستانی اداکار فواد خان نے کرن جوہر کے پروجیکٹ میں کام کرنے کے پانچ کروڑ روپے لیے تھے جس کی ہم نے بھرپور مخالف کی تھی۔

یاد رہے سال 2016 میں بھارت کے اڑی سیکٹر پر حملہ ہوا تھا جس کا ذمہ دار پاکستان کو ٹھرانے کی کوشش کی گئی تھی، اسی دوران ’آئی ایم پی پی اے‘ نے ایک قرارداد کے زریعے پاکستانی اداکاروں پر پابندی عائد کردی تھی۔

پاکستانی اداکاروں کے خلاف بیان گن پوائنٹ پر دیا، کرن جوہر

یاد رہے کہ اڑی سیکٹر پر حملے اور لائن آف کنٹرول پر کشیدگی کے بعد بھارتی انتہا پسندوں کی جانب سے فلم سازوں کو دھمکیاں دی گئی تھی، جس کے بعد انہوں نے اپنی فلموں میں سے پاکستانی اداکاروں کو نکال کر بھارتی فنکاروں کو شامل کرلیا۔ ساتھ اُن فلموں کی ریلیز روک دی گئی تھی جن میں پاکستانی فنکاروں نے اداکاری کے جوہر دکھائے تھے۔

علاوہ ازیں بالی وڈ فلم رئیس کے ہدایت کار راہول نے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر اعتراف کیا تھا کہ ’ہم نے ایک اداکار کی حیثیت سے ماہرہ خان کے ساتھ ٹھیک نہیں کیا، بھارتیوں نے بھی پاکستانی اداکارہ کے ساتھ بہت غلط برتاؤ کیا باوجود اُس کے کہ ماہرہ ایک آرٹسٹ ہیں۔

واضح رہے کہ فلم ’رئیس‘ میں شاہ رخ خان نے ایک گجراتی گینگسٹر، ماہرہ خان نے ان کی اہلیہ جبکہ نوازالدین صدیقی نے پولیس اہلکار کا اہم کردار ادا کیا تھا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات  کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں