site
stats
پاکستان

عمران فاروق قتل کیس: ایف آئی اے کی ٹیم لندن بھیجنے کا فیصلہ

اسلام آباد: عمران فاروق قتل کیس کی تحقیقات میں پیش رفت کے لیے ایف آئی اے کی ٹیم لندن بھیجنے کا فیصلہ کرلیا جو 30 گواہوں کے بیانات ریکارڈ کرے گی۔

اے آر وائی نیوز کے نمائندہ اسلام آباد ذوالقرنین حیدر کے مطابق برطانیہ کی سیکریٹری داخلہ امبر روڈ نے پاکستان کا دورہ کرتے ہوئے وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان سے ملاقات کی تھی جس میں عمران فاروق قتل کیس پر بات کی گئی۔

ملاقات میں فیصلہ کیا گیا کہ ایف آئی اے کی ایک ٹیم لندن روانہ کی جائے گی جو وہاں پہنچ کر مقد مہ کے 30 گواہان کے بیانات ریکارڈ کرے گی، جائے وقوع کا دورہ کرے گی اور اسکاٹ لینڈ یارڈ کی جانب سے حاصل کردہ دیگر شواہد کا بھی جائزہ لے گی۔


مزید اطلاعات ہیں کہ گواہوں میں ایک ڈرائیور بھی شامل ہے جب کہ وہ افراد بھی شامل ہیں جنہوں نے ملزمان کو ٹھہرایا تھا ان کے بھی بیانات ریکارڈ کیے جائیں گے۔

واضح رہے کہ پاکستان کے دورے پر آئی ہوئی برطانیہ کی سیکریٹری داخلہ امبر روڈ  اور چوہدری نثار نے 21 مارچ کو اسلام آباد میں مشترکہ پریس کانفرنس کی تھی جس میں چوہدری نثار کا کہنا تھا کہ بانی ایم کیو ایم کا معاملہ دونوں ممالک میں رنجش کا باعث ہے، بانی ایم کیو ایم کا مسئلہ گزشتہ 4 سال سے اٹھا رہے ہیں۔

یہ پڑھیں: عمران فاروق قتل کیس میں انصاف ہوگا، برطانوی سیکریٹری داخلہ

جواب میں سیکریٹری داخلہ برطانیہ نے یقین دہانی کرائی تھی کہ عمران فاروق قتل کیس میں انصاف کے تقاضے پورے کیے جائیں گے، ہماری کوشش ہوگی کہ حق اور سچ کی ہر صورت جیت ہو، بانی ایم کیو ایم کے معاملات پولیس دیکھ رہی ہے ہر صورت انصاف ہوگا،  برطانیہ میں غیر قانونی سرگرمیوں کی بالکل اجازت نہیں ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top