site
stats
پاکستان

وزیراعظم ہی چور ہو تو ملک کا بیڑہ غرق ہو جاتا ہے،عمران خان

لاہور: پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ آج لاہور میں تاریخ بنے گی، لاہور کے لوگ سیاسی شعور رکھتے ہیں اور لوگوں کی بڑی تعداد احتساب مارچ میں شریک ہو گی۔

شاہدرہ میں احتساب ریلی کے آغاز پر خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ کہ اب عوام کو شعور آگیا ہے اور وہ ضرور نکلیں گے ۔”اللہ کے بعد لاہور کے لوگوں پر اعتماد ہے جو سیاسی شعور رکھتے ہیں “۔تحریک انصاف بدل گئی ہے اور اب کوئی بھی تشدد ہوا تو مقابلہ کریں گے تاہم اگر حکومت پر امن رہے گی تو ہم بھی پر امن رہیں گے

سربراہ تحریک پاکستان نے کہا کہ پاکستان کے مستقبل کیلئے یہ ریلی بہت ضروری ہے کیونکہ حکمران ملک کا مستقبل تباہ کر رہے ہیں چھوٹے چوروں سے ملک تباہ نہیں ہوتا بلکہ جب وزیراعظم اور وزراء ہی چور ہوں تو ملک کا بیڑہ غرق ہو جاتا ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ 5 ماہ سے وزیر اعظم سے جواب مانگ رہے ہیں جمہوریت میں وزیراعظم جوابدہ ہوتا ہے جب کہ ہمارے وزیراعظم جو وزیراعظم کم اوربادشاہ زیادہ ہیں خود کو قانون سے بالا تر سمجھتے ہیں وہ اپمی مرضی کا قانون لاکر اپنی مرضی کا احتساب کریں گے۔

عمران خان نے خواجہ آصف کا ذکرکرتے ہوئے کہا کہ خواجہ آصف میاں صاحب کو کہتے ہیں لوگ پاناما لیکس بھول جائیں گے لیکن خواجہ آصف یاد رکھیں نہ عوام بھولیں نہ عمران خان بھولے گا اور نہ ہی خواجہ آصف تمہیں بھولنے دیں گے۔

انہوں نے مزید کہا کہ وزیراعظم سے برطانیہ کی جائیداد سے متعلق سوالات کررہے ہیں ،جواب نہیں مل رہا،جواب دینے کے بجائے وزیر اعظم کے درباری سب کو کرپٹ قرار دیتے ہیں ۔نوازشریف خوش فہمی میں نہ رہیں کہ لوگ پاناما کرپشن کوبھول جائیں گے، عمران اور پاکستانی قوم پاناما معاملے کو نہیں بھولے گی،

تحریک انصاف کے سربراہ نے کہا کرپٹ لیڈر ملک کے اداروں کو بھی کرپٹ کر دیتا ہے اورادارے کرپٹ ہوں تو ملک تباہ ہو جاتا ہے اورپاکستان کے اداروں کو سب سے زیادہ تباہ نواز شریف نے کیا ہے۔

کپتان نے الزام لگایا کہ چیئرمین ایف بی آرہرمہینے کروڑوں روپے دبئی بھیجتے ہیں اس لیے چیئرمین ایف بی آرمیں جرات نہیں کہ وزیر اعظم سے پوچھیں کہ پیسے کہاں سے آئے؟۔

سربراہ تحریک انصاف نے الیکشن کمیشن کو مسلمل لیگ ن کی بی ٹیم قرار دیتے ہوئے الزام لگایا کہ قوم الیکشن کمیشن میں پڑی پٹیشنز پر فیصلوں کا انتظار کر رہی ہے اور یہی نہیں‌ نواز شریف نے ابھی سے 2018 کا الیکشن خریدنے کا منصوبہ بنا لیا ہے جس کے لیے اپنے ہرایم این اے کو ایک ایک ارب روپیہ دے گا۔

واضح رہے تحریک انصاف کی احتساب ریلی شاہدرہ سے ہوتی ہوئی شاہراہ قائداعظم فیصل چوک پر ختم ہو گی ریلی کے راستوں پر سیکورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے ہیں۔

اس سے قبل زمان پارک سے احتساب مارچ میں شرکت کیلئے نکلتے وقت میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ شریفوں کی بادشاہت کو وارننگ دیتا ہوں،احتجاج پرامن ہے،وہ بھی پرامن رہیں ، اگر نواز شریف پاناما لیکس سے نکل گئے تو وہ مزید ادارے تباہ کریں گے اور اگلا الیکشن بھی خریدیں گے ۔کرپشن کا پیسہ ہضم نہیں کرنے دونگا ۔ہمارا احتجاج پر امن ہے اگر کوئی بھی انتشار ہوا تو حکومت ذمہ دار ہو گئی عمران خان کے ہمراہ شاہ محمود قریشی ، جہانگیر ترین اور اسد عمر بھی موجود تھے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top