غلامی قبول کر نے والوں کا کوئی مستقبل نہیں ہوتا، عمران خان -
The news is by your side.

Advertisement

غلامی قبول کر نے والوں کا کوئی مستقبل نہیں ہوتا، عمران خان

آزاد کشمیر: تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ غلامی قبول کر نے والوں کا کوئی مستقبل نہیں ہوتا۔

آزاد کشمیر کے علاقہ پلندری میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان کا کہنا تھا کہ ہم برابر کے شہری ہیں کوئی کسی کا غلام نہیں ،نیلسن مینڈیلا نے حقوق کے لیے 27 سال جیل میں گزارے، جو حق اور انصاف کے لیے لڑتے ہیں ان کا بڑا مرتبہ ہوتا ہے ورنہ غلامی قبول کرنے والوں کاکوئی مستقبل نہیں ہوتا اور آزادی کی جنگ لڑنے والا کبھی نہیں مرتا۔

تحریک انصاف کے چیئرمین کا کہنا تھا کہ حکم خداوندی بھی ہے کہ جب تک کوئی قوم خود اپنی حالت نہیں بدلتی میں بھی اس کی حالت نہیں بدلتا، ہمیں اپنی حالت بدلنے کے لیے حقوق کی جنگ لڑنی ہے ان کے خلاف جو ہمارے حقوق پر قبضہ کرکے بیٹھ گئے ہیں، میں آزاد کشمیر کے عوام کو کہنے آیا ہوں کہ اپنی حالت بدلنے کے لیے جنگ لڑیں،اختیارات کی نچلی سطح پر منتقلی سے ہی نظام تبدیل ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ دنیا کی تاریخ کتنے امیر لوگوں کو جانتی ہے، کتنے ہی لوگ آئے اور محلات بنا کر چلے گئے، ہم نے کرپٹ لوگوں کے سامنے سرنہیں جھکایا۔

عمران خان نے الزام عائد کیا کہ الیکشن کمیشن میں بے ضمیر لوگ بیٹھے ہیں، نادرا میں ایسے لوگ بیٹھے ہیں جو ڈیٹا تبدیل کردیتے ہیں، عوام پٹرول پر پچاس اور ڈیزل پر سو فیصد ٹیکس دے رہے ہیں جو کہ ظلم ہے، کرپٹ افراد نے معاشرے پر قبضہ کرلیا ہے۔

چیئرمین تحریک انصاف نے کہا کہ اختیارات نچلی سطح پر منتقل نہ کرنے کے لیے کرپٹ حکمران بلدیاتی انتخابات کرانے سے گریز کرتے ہیں، کرپٹ افراد نے ہمارے معاشرے پر قبضہ کرلیا، عوام آگے بڑھیں اور انہیں شکست دیں، مسلم لیگ ن کی حکومت نے بجلی کی قمیت 80 فیصد بڑھائی جبکہ لوڈ شیڈنگ کے دورانیے میں بھی کمی نہیں آئی۔

پولیس نظام کے حوالے سے ان کا کہنا تھا کہ پنجاب پولیس میں سیاسی پشت پناہی اور معاوضوں کے عوض بھرتیاں ہوئیں جن میں مجرم بھی شامل تھے ، اس عمل سے پنجاب پولیس کوتباہ کردیا گیا، بتایا جائے کہ نااہل پولیس چھوٹو گینگ کا کیسے مقابلہ کرے گی، اگر کوئی بڑا گینگ آگیا تو پولیس کیا کرے گی ۔

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں