site
stats
پاکستان

سندھ میں کسی قسم کی آزادی نہیں لوگوں کوغلام بنایاگیاہے، عمران خان

سیہون شریف : پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ کا کہنا ہے کہ اس مرتبہ پہلی بار پیپلزپارٹی کوشکست ہوگی، مجھے بہانہ بناکرلعل شہبازقلندرکےمزارپرحاضری دینےسےروکا گیا، سندھ میں کسی قسم کی آزادی نہیں لوگوں کوغلام بنایا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان نے سیہون میں میڈیاسے بات کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے جلسےمیں لوگ چل کر آتے ہیں ، ہمارےجلسوں میں لوگوں کوبھرکرنہیں لایاجاتا، مجھےلعل شہبازقلندرکےمزارپرحاضری دینی تھی، کسی مزارپرحاضری دینےکےلیےکیااجازت چاہیےہوتی ہے، یہاں کسی قسم کی آزادی نہیں لوگوں کوغٖلام بنایا گیا ہے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ خوف کے دو طریقے ہیں،تھانےمیں بلانا یا کسان کا پانی بند کرنا، سندھ میں جوکچھ کل ہوا وہ کبھی نہیں ہوا، اس سےایک چیزثابت ہوتی ہےکہ ان کوخوف ہے، ان کوخوف ہے سندھ میں تبدیلی آگئی ہے، ثابت کروں گااس مرتبہ پہلی بار پیپلزپارٹی کوشکست ہوگی۔

انھوں نے کہا کہ حکومت نےاپنی مرضی سےاداروں کےسربراہ رکھےہیں، عدلیہ آزاد ہے، جس سے عوام کو امید ہے، سندھ کی پولیس زرداری اور فریال تالپور کے غلط کام بچانےکےلیےاستعمال ہوتی ہے، وفاق میں ادارے سندھ میں پولیس کی طرح استعمال ہوتےہیں، پرامن احتجاج پرمیرےخلاف دہشت گردی کاالزام لگا دیا گیا۔


مزید پڑھیں : درگاہ لعل شہبازپرحاضری سے روکنا زرداری کی بوکھلاہٹ کو ظاہرکرتی ہے، عمران خان


سربراہ پی ٹی آئی کا کہنا تھا کہ جمہوریت میں احتجاج کرنامیراحق ہے، 300ارب باہر لے جانے والے نااہل شخص کا احتساب ہورہاہے، عوام کے جان و مال کی حفاظت کرنا ریاست کا کام ہے ، حکومت ایک مجرم کےساتھ کھڑی ہوگئی ہے،یہ اس کاکام نہیں۔

عمران خان نے کہا کہ نااہل شخص کوبچانےکےبجائےجلدی انتخابات بہترہیں، شریف برادران اورآصف زرداری میں نوراکشتی ہورہی ہے، قوم کسی طرح کےاین آراوکونہیں مانےگی، پاکستان کا پیسہ چوری ہوا،مشرف کو انہیں معاف کرنے کا حق نہیں تھا، مشرف نےدوارب وکیلوں پر خر چ کیاپھراین آراودےدیا، این آر او دیا گیا تو پورے پاکستان میں عوام کو باہر نکالوں گا۔

انکا مزید کہنا تھا کہ ہم کسی طرح کی سودےبازی ،این آراوقبول نہیں کریں گے، اگرمیں جلدی انتخابات کاکہہ رہاتواس میں اسٹیبلشمنٹ کاکیاہاتھ ہے، ملک کاوزیراعظم ایک کرپٹ آدمی سے ملاہوا ہے، صاف شفاف الیکشن کراناایک جمہوری طریقہ ہے، ایم کیوایم کےبچاؤکاطریقہ بانی ایم کیوایم سےمکمل علیحدگی ہے، ملک کی تقسیم کرنےکی بات کرنےوالےکوالیکشن کی اجازت نہیں دینی چاہیے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top