The news is by your side.

Advertisement

چترال میں 59 میگا واٹ کے بجلی گھر کا افتتاح

چترال: پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے صوبہ خیبر پختونخواہ کے ضلع چترال میں 59 میگا واٹ کے بجلی گھر کا افتتاح کردیا۔ اس موقع پر ان کا کہنا تھا کہ 1 ہزار سے زائد مائیکرو ہائیڈل پراجیکٹس بنا کر دیں گے۔

تفصیلات کے مطابق چترال میں پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے پاور پراجیکٹس کے افتتاح کے بعد جلسہ عام سے خطاب کیا۔ اس موقع پر ان کا کہنا تھا کہ 90 کی دہائی سے پہلے پاکستان ترقی کر رہا تھا۔ 90 کی دہائی میں ہائیڈل پراجیکٹس پر پیسہ لگایا گیا اور کمیشن لیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ خیبر پختونخواہ میں 2 ہزار 900 میگا واٹ بجلی کا منصوبہ ہے جس کی فزیبلٹی بھی دے چکے ہیں۔ 200 سے زائد مائیکرو ہائیڈل پراجیکٹس بن چکے ہیں جبکہ مزید 300 سے زائد پراجیکٹس اسی سال مکمل ہوں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم 1 ہزار سے زائد مائیکرو ہائیڈل پراجیکٹس بنا کر دیں گے۔

چترال نے مشرف کو ووٹ دیا

جلسہ عام سے خطاب میں عمران خان کا کہنا تھا کہ چترال کے لوگوں نے مشرف کو ووٹ دیا کیونکہ انہوں نے لواری ٹنل بنا کر دی۔ تحریک انصاف چترال کے لوگوں کی بنیادی ضروریات پر پوری توجہ دے رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ چترال کے لوگ دھوکہ نہیں کھائیں گے یہ کام کرنے والے کو ووٹ دیتے ہیں۔

عمران خان نے کہا کہ ڈیرہ غازی خان اور کرک کے علاقوں میں پانی نہیں وہاں بھی توجہ دیں گے۔

انہوں نے کہا کہ خیبر پختونخواہ جیسی پولیس پاکستان کے کسی دوسرے صوبے میں نہیں ہے۔ ہم صحت، پانی، تعلیم اور امن و امان پر خصوصی توجہ دے رہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ میں جیسا کام کیا گیا اسے خراج تحسین پیش کرتا ہوں۔ صوبے میں پہلے 3 ہزار سرکاری ڈاکٹرز تھے اب 9 ہزار ہیں۔

پیسہ بنانے کے لیے کوئلے کے بجلی گھر

عمران خان نے وفاقی حکومت کے کوئلے کے بجلی گھروں کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ چین میں کوئلےکے بجلی گھر بند کردیے گئے اور یہاں کھولے جا رہے ہیں۔ دنیا بھر میں آلودگی کی وجہ سے کوئلے کے بجلی گھر بند کیے جا رہے ہیں، یہاں پیسہ بنانے کے لیے کوئلے پر توانائی خرچ کی جارہی ہے۔

مزید پڑھیں: ساہیوال کول پاور پلانٹ کا حکومتی اشتہار تنقید کی زد میں

کراچی پاکستان کا امیر شہر

عمران خان کا کہنا تھا کہ کراچی پاکستان کا امیر شہر ہے لیکن وہاں لوگوں کو پانی تک نہیں ملتا۔ کراچی میں کرپٹ ٹینکر مافیا پانی پر پیسہ بناتا ہے اور عام شہری خریدتے ہیں۔

بڑا چور احتساب کے شکنجے میں

عمران خان نے حکمران خاندان پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ پہلی مرتبہ بڑا چور احتساب کے شکنجے میں آیا ہے۔ ایک ہزار ارب روپے کی چوری ہوئی، احتساب تو ضرور ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ پیسہ عمران خان کا نہیں عوام کا چوری ہوا ہے۔ یہ پیسہ پاکستان میں لگایا جاتا تو ملک کی تقدیر ہی بدل جاتی۔

اسحٰق ڈار کی کل جے آئی ٹی کے سامنے پیشی پر ان کا کہنا تھا کہ اسحٰق ڈار کا چہرہ دیکھنے والا تھا، چوری کے بعد معصوم چہرہ بنا لیا جاتا ہے۔ کل شہزادی صاحبہ بھی آرہی ہے، کیا یہ لوگ بے نظیر بھٹو کو بھول گئے ہیں۔


Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں