site
stats
پاکستان

پنجاب میں 6 بار حکومت بنائی گئی لیکن کوئی اسپتال نہیں بنایا: عمران خان

لاہور: پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے کہا ہے کہ دنیا میں جنگوں کے دوران بھی اسپتالوں پر حملے نہیں ہوتے۔ سیاسی مخالف اور ن لیگ کے وزرا کینسر اسپتال پر کیوں حملے کرتے ہیں، اگر کوئی گھپلا ہے تو تحقیقات کروائیں اور عمران خان کو جیل میں ڈال دیں۔

تفصیلات کے مطابق لاہور میں شوکت خانم اسپتال کے زیر اہتمام سماجی ذمہ داری ایوارڈ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان نے گذشتہ سال شوکت خانم اسپتال کے لیے 40 کروڑ روپے دینے والوں کا شکریہ ادا کیا۔

ان کا کہنا تھا کہ شوکت خانم اسپتال بنانے میں فنکاروں کا اہم کردار ہے، نصرت فتح علی خان، دلدار حسین بھٹی نے اس سلسلے میں نمایاں خدمات انجام دیں۔ شوکت خانم ہسپتال میں 75 فیصد مریضوں کا علاج مفت ہے، دنیا میں اس کی مثال نہیں ملتی۔

عمران خان نے بتایا کہ شوکت خانم اسپتال کی گنجائش دو گنا کر رہے ہیں، لاہور اور پشاور کے بعد کراچی میں کینسر کا اسپتال بنا رہے ہیں۔

چیئرمین تحریک انصاف کا کہنا تھا کہ دنیا میں جنگوں کے دوران بھی اسپتالوں پر حملے نہیں ہوتے۔ سمجھ نہیں آتی، سیاسی مخالف اور ن لیگ کے وزرا کینسر اسپتال پر کیوں حملے کرتے ہیں۔ اگر وہ سمجھتے ہیں کوئی گھپلا ہو رہا ہے تو حکومت آپ کے پاس ہے، تحقیقات کروائیں اور عمران خان کو پکڑ کر جیل میں ڈال دیں۔

انہوں نے کہا کہ کینسر کا کوئی اسپتال نہیں بنایا گیا ہے۔ ایک اسپتال جو کام کر رہا ہے اس پر سیاسی بیان بازی ہو رہی ہے۔ حکمرانوں نے خود علاج کروانا ہو تو بیرون ملک چلے جاتے ہیں۔

عمران خان نے الزام عائد کیا کہ ایل ڈی اے شوکت خانم اسپتال کے نقشوں میں رکاوٹ ڈال رہا ہے، بجلی کنکشنز کے حصول میں بھی رکاوٹیں پیدا کی جا رہی ہیں۔

آخر میں چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے کارپوریٹ سیکٹر کے ڈونرز میں ایوارڈز بھی تقسیم کیے۔


Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top