The news is by your side.

Advertisement

عمران خان کا ایاز صادق کو اسپیکر ماننے سے انکار

اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے قومی اسمبلی کے اجلاس سے خطاب کیا۔ اپنے خطاب میں انہوں نے ایاز صادق کو ان کے متعصبانہ رویے کی وجہ سے اسپیکر ماننے سے انکار کردیا۔

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان آج پارلیمنٹ ہاؤس پہنچے جہاں انہوں نے قومی اسمبلی کے اجلاس میں شرکت کی۔

اجلاس میں اظہار خیال کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ اسپیکر کا عہدہ غیر جانبدار ہوتا ہے لیکن اسپیکر ایاز صادق جانبدار ہیں۔ ’میں انہیں اسپیکر ماننے سے انکار کرتا ہوں‘۔

واضح رہے کہ اسپیکر ایاز صادق نے وزیر اعظم کی نااہلی کے خلاف جمع کروائے جانے والے ریفرنسز کو مسترد کردیا تھا۔ اس کے برعکس انہوں نے تحریک انصاف کے 2 رہنماؤں کے خلاف جمع کروائے جانے والے ریفرنس الیکشن کمیشن کو بھجوا دیے تھے۔

ان کا کہنا تھا کہ اسپیکر کے پاس تفتیش یا فیصلہ دینے کا اختیار نہیں ہوتا۔ وہ صرف پیش کیے گئے ثبوتوں اور دستاویز کی بنیاد پر کوئی فیصلہ لے سکتا ہے۔

رائیونڈ کسی کی جاگیر نہیں، عمران خان *

انہوں نے واضح کیا کہ وزیر اعظم کے خلاف جمع کروائے جانے والے ریفرنس کے ساتھ کمزور دستاویز پیش کی گئیں جبکہ تحریک انصاف رہنماؤں کے خلاف جمع کروائے جانے والے ریفرنس کے ساتھ ٹھوس شواہد پیش کیے گئے جنہوں نے ان کی اہلیت پر سوال اٹھا دیے۔

اسپیکر ایاز صادق نے تحریک انصاف رہنماؤں کے خلاف ریفرنس الیکشن کمیشن میں بھجوانے کا عندیہ دیا۔

اپنے خطاب میں عمران خان کا کہنا تھا کہ اسپیکر کے اس فیصلہ نے ان کے عہدے کی ساکھ کو نقصان پہنچایا ہے۔

انہوں نے پانامہ پیپرز کی شفاف تحقیقات کا بھی مطالبہ کیا۔ ’ہم یہاں وزیر اعظم کے خلاف تفتیش کا مطالبہ کر رہے ہیں اور وزیر اعظم فیتے کاٹتے پھر رہے ہیں‘۔

انہوں نے دعویٰ کیا کہ اگر انہوں نے حکومت کی کرپشن کے خلاف بولنا بند کردیا تو ان کے خلاف بھی مختلف قسم کی جاری تحقیقات ختم کردی جائیں گی۔

ان کے خطاب کے بعد اپوزیشن نے قومی اسمبلی کے اجلاس سے واک آؤٹ کردیا

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں