site
stats
پاکستان

اقتدار میں آئے تو وزراء سے ایک ایک پیسے کا حساب لیں گے، عمران خان

اوکاڑہ : چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان نے کہا ہے کہ نوازشریف نے بینکوں سے قرضے لے کر معاف کرائے اور قطری خط کے سواعدالت میں کوئی ثبوت پیش نہیں کرسکے لیکن جب نااہل ہوئے تو عدلیہ کے خلاف تحریک چلانے لگے.

وہ اوکاڑہ میں جلسہ عام سے خطاب کر رہے تھے، عمران خان کا کہنا تھا کہ نواز شریف منی ٹریل ثابت میں ناکام رہے اور 30 ہزار کروڑ کا بتانے کے لیے صرف ایک دستاویز پیش کی وہ بھی جھوٹا قطری خط تھا جب کہ میں نے سپریم کورٹ میں ایک ایک چیز کا جواب دیا اور 30 دستاویز دیں.

انہوں نے کہا کہ کچھ لوگ نوازشریف اور میرے کیس کا موازنہ کر رہے تھے حالانکہ میں کبھی اقتدارمیں نہیں رہا، کرپشن تو اقتدارمیں ہوتی ہے اور میں نے جو بھی کمایا وہ کرکٹ سے کمایا اور سب کی منی ٹریل عدالت میں پیش کی اس لیے موازنہ کرنا مناسب نہیں.

عمران خان نے وزیراعلیٰ شہباز شریف کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ حدیبیہ ملز پیپرز کیس میں نیب کے لچھ لوگوں نے آپ کو بچوالیا لیکن تحریک انصاف کئی ٹھوس ثبوت لے کر عدالت جائے گی اور نواز شریف کی طرح تمہاری وکٹ بھی گرادیں گے اس لیے تیار ہوجاؤ.

انہوں نے وزیر اعظم شاہد خاقان اور وفاقی وزراء خواجہ سعد رفیق و خواجہ آصف کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت آئے گی تو سارے کرپٹ لوگوں کو جیلوں میں بھر دیں گے اور سب حساب لیں گے کہ وزیر بننے سے پہلے کتنی جائیداد تھی اور اب اتنی کیسی ہوگئے؟

عمران خان نے جنگ اور جیو نیوز کے مالک میر شکیل الرحمان کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ میں آپ کو پیغام دے رہا ہوں کہ ابھی سے تیاری کرلیں میں کیس کرنے جا رہا ہوں، میراتواحتساب ہوگیا ہے اب میرشکیل جیسےلوگوں کااحتساب کاوقت ہے اگر حکومت ملی تو پوچھوں گا کہ اربوں روپے کہاں سے آئے؟ روئس رولز گاڑی چلاتے ہو تو آخر کتنا ٹیکس دیتے ہو؟

انہوں نے کہا کہ خیبرپختونخواہ میں اقتدار ملا تو میں نے پیسے نہیں بنایا کوئی فیکٹری نہیں بنائی بلکہ پولیس کو ٹھیک کیا، تعلیمی نظام کو بہتری کی طرف لائے اور لوگوں کا معیار زندگی بلند کیا جب کہ شریف برادران نے اپنے بیٹوں، دامادوں اور رشتے داروں کو ارب پتی بنایا.

عمران خان نے کہا کہ بھارت میں ایک پادری کو انتہا پسندوں نے جیل میں ڈال دیا اور گائے کی زبیحہ کا بہانہ بنا کر مسلمانوں کو قتل کیا تو قائداعظم سمجھ گئے کہ بھارت میں مسلمانوں کو برابر کاحق نہیں ملنا اور اقلیتوں کے لیے بھارت محفوظ جگہ نہیں رہی تو پاکستان بنانے کا فیصلہ کیا.

عمران خان نے کہا کہ کوئٹہ میں چرچ پر دہشت گرد حملہ پر افسوس ناک ہے اور اس بزدلانہ حملے کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے، انسانیت کے دشمنوں کے لیے پاکستان میں کوئی جگہ نہیں ہے اور جلد ان گنے چنے دہشت گردوں کا بھی خاتمہ ہو جائے گا.

انہوں نے کہا کہ جہانگیر ترین نہ تو کرپٹ ہیں، نہ منی لانڈرنگ کی ہے ایک معمولی ٹیکنیکل غلطی پر انہیں نااہل قرار دے دیا گیا لیکن اس کے باوجود جہانگیر ترین نے یہ نہیں کہا کہ مجھے کیوں نکالا بلکہ فوری طور پر پارٹی سے مستعفی ہو گئے، میں انہیں پارٹی کے لیے کی گئی جد و جہد پر خراج تحسین پیش کرتا ہوں اور دعا گو ہوں کہ وہ نظرِ ثانی کیس میں فتح مند ہوں گے.

عمران خان نے اوکاڑہ کے عوام کا شکریہ ادا کرتا ہوئے کہا کہ بڑی تعداد میں لوگوں نے شرکت کرکے دل جیت لیا ہے اور شیخ رشید کی طرح میں بھی اوکاڑہ کے عوام کے جوش و خروش سے بہت متاثر ہوا ہوں.

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top