The news is by your side.

Advertisement

’مجھے پوری امید ہے انشاء اللہ عمران خان کامیاب ہوگا‘

پاک فوج کے شعبۂ تعلقاتِ عامہ (آئی ایس پی آر) کے اشتراک سے 90 کی دہائی میں نشر ہونے والے معروف پاکستانی ڈرامے الفا براوو چارلی میں کیپٹن گل شیر خان کا کردار ادا کرنے والے اداکار قاسم شاہ نے وزیر اعظم عمران خان کو امید کی کرن قرار دے دیا۔

پاکستان تحریک انصاف کے آفیشل ٹویٹر اکاؤنٹ سے الفا براوو چارلی میں گل شیر کا کردار ادا کرنے والے اداکار کی ویڈیو شیئر کی گئی۔

ویڈیو میں کیپٹن گل شیر خان نے وزیراعظم عمران خان کے بارے میں بتایا کہ وہ ورلڈکپ ہارنے کے بعد 1987 میں کرکٹ سے ریٹائرمنٹ لینے کا فیصلہ کرچکے تھے مگر انہیں احساس ہوا کہ کرکٹ کے بغیر اسپتال (شوکت خانم اسپتال) نہیں بن سکتا۔

’اسی جذبے کو سامنے رکھتے ہوئے اُس نے کرکٹ کھیلی، ورلڈکپ کے نزدیک پہنچ گیا اور اُسے احساس ہوا کہ اگر میں ورلڈکپ جیت گیا تو کینسر اسپتال بن سکتا ہے، اُس کے لیے ورلڈکپ سے زیادہ اسپتال ضروری تھا‘۔

’اس جذبے کے ساتھ وہ بندہ ورلڈکپ میں داخل ہوا، شروع کی کارکردگی پوری دنیا کے سامنے ہے مگر میں نے دیکھا کہ نیوزی لینڈ کے سفارت خانے میں منعقدہ عشائیے سے خطاب کرتے ہوئے وہ کہہ رہا تھا کہ ہم یہاں ورلڈکپ لینے آئے ہیں اور یہ لے کر جائیں گے‘۔

گل شیر خان کا کہنا تھا کہ ’میں نے جب ورلڈکپ ساتھ لے جانے کی بات سنی تو ذاتی طور پر بہت زیادہ عجیب لگا کیونکہ ٹیم کی حالت ایسی نہیں تھی، میں سوچ رہا تھا کہ یہ شخص کیا اور کیوں کہہ رہا ہے مگر اُس نے ثابت کیا کیونکہ اُسے معلوم تھا کہ جو مقصد لے کر وہ چل رہا ہے، اُس میں اللہ مدد کرے گا‘۔

’اُس نے آگے بڑھ کر سیاست اور ملک کو ٹریک پر لانے کی بات کی، اُس نے گند صاف کرنے کا ارادہ کیا، جس کے لیے اُس کو نمبر ون کی سیٹ حاصل کرنا ضروری تھا، پھر اُس نے مکمل سچائی اور جذبے کے ساتھ ایسا کام کیا جسے فطرت اور دنیا دونوں نے ہی تسلیم کیا، پھر پاناما آگیا تو جتنے دوڑنے والے بڑے گھوڑے تھے وہ پیچھے رہ گئے اور پھر وہ اُس کرسی تک پہنچ گیا‘۔

’اب انشاء اللہ اس نے سسٹم کو ٹھیک کرنا ہے، مجھے پوری امید ہے کہ وہ ناکام نہیں ہوگا، وہ کامیاب ہوگا کیونکہ وہ پرعزم اور جذبے سے سرشار ہے، اُس کے سامنے بڑے بڑے دیو ضرور ہیں، آج تعلیم کے مختلف معیارات ہیں مگر وہ آخر میں سب کو ختم کر کے سب کو ملا دے گا، اسی طرح (ایک نظامِ تعلیم سے) بچہ اچھے کردار کا مالک بنے گا اور ہمارے سامنے بہترین معاشرہ آئے گا‘۔

انہوں نے امید ظاہر کی کہ سیاحت کے فروغ کے لیے بھی یہ بندہ (عمران خان) بہت کام کرسکتا ہے کیونکہ اُس کی سوچ پاکستان کے لیے ہے، مجھے پوری امید ہے کہ انشاء اللہ خان صاحب یہ سب کریں گے اور وہ کامیاب ہوں‌ گے‘۔

Comments

یہ بھی پڑھیں