The news is by your side.

Advertisement

عمران خان اسلام آباد میں ضلعی انتظامیہ کی اجازت کے بغیر جلسہ کرنے میں کامیاب

اسلام آباد: تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان بلدیاتی انتخابات کے سلسلے میں منعقد کردہ جلسے میں ضلعی انتظامیہ کی جانب سے روکنے کی کوشش کے باوجود جلسہ گاہ پہنچ گئے۔

تفصیلات کے مطابق تحریک انصاف آج اسلام آباد کے ترامڑی چوک پرطاقت کا مظاہرہ کررہی ہے تاہم ضلعی انتظامیہ نے وارننگ جاری کی تھی کہ سیکیورٹی خدشات کے سبب عمران خان جلسے سے خطاب نہ کریں۔

عمران خان جب خیبر پختونخواہ ہاوٗس سے روانہ ہوئے تو انتظامیہ کی جانب سے ڈپٹی کمشنر اسلام آباد نے انہیں روکنے کی کوشش کی تاہم عمران خان تمام رکاوٹیں عبور کرکے جلسہ گاہ پہنچ گئے۔

عمران خان کے ہمراہ پی ٹی آئی کے رہنماء ابرارالحق اور اسد عمر بھی موجود ہیں جبکہ جلسہ گاہ میں تحریک انصاف کی مقامی قیادت کی بھی بڑی تعداد موجود ہے۔

ضلعی انتظامیہ اور اسلام آباد کی مقامی پولیس نے عمران خان کو جلسہ گاہ پہنچنے سے روکنے کے لئے کئی اقدامات کئے تھے جن میں جلسہ گاہ کے راستے میں رکاوٹیں کھڑی کرکے ٹریفک کو دوسرے راستوں پرگامزن کرنا بھی شامل ہیں۔


عمران خان کا خطاب


 

عمران خان نے جلسے کے شرکا سے خطاب کرتے ہوئے مسلم لیگ ن کی حکومت کو آڑے ہاتھوں لے لیا۔

انہوں وزیراعظم نواز شریف پر تنقید کرتے ہوئے کہاکہ جو کبھی ایمانداری سے کرکٹ نہیں کھیل سکا وہ صاف اور شفاف انتخابات کا انعقاد کیسے کروائے گا؟۔

انہوں نے کہا کہ اگر جوڈیشل کمیشن نے ایکشن لیا ہوتا تو بلدیاتی انتخابات میں دھاندلی نہیں ہورہی ہوتی۔

انہوں نےپورے نظام کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ یہاں چھوٹے چور جیل جاتے ہیں اور بڑے چوروں کو اسمبلیوں میں جگہ مل جاتی ہے۔

عمران خان نے عوام بالخصوص خواتین کا شکریہ ادا کیا کہ جنہوں نے تمام تررکاوٹوں کے باوجود جلسے میں شرکت کی۔


ردعمل


 

پی ٹی آئی کے جلسے کے ردعمل میں وفاقی وزیراطلاعات و نشریات پرویز رشید کا کہنا تھا کہ عمران خان کو سیکیورٹی خدشات کی بنا پر اسلام آباد میں جلسہ کرنے کی اجازت نہیں ملی تھی، انہوں نے الیکشن کمیشن کے ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کی ہے۔

الیکشن کمیشن نے بھی عمران خان کےجلسے کو ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی قراردیا ہے۔

واضح رہے کہ قومی اسمبلی کے ممبران الیکشن کیمپئین کے سلسلے میں کسی بھی بلدیاتی حلقے کا دورہ نہیں کرسکتے۔

وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں بلدیاتی انتخابات کا انعقاد 30 نومبر 2015 ہوگا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں