ڈان لیکس میموگیٹ سےبھی زیادہ خطرناک ہے،عمران خان -
The news is by your side.

Advertisement

ڈان لیکس میموگیٹ سےبھی زیادہ خطرناک ہے،عمران خان

اسلام آباد : چیئرمین تحریک انصاف نے کہا ہے کہ ڈان لیکس قومی مسئلہ اور میموگیٹ سےبھی زیادہ خطرناک ہے اس لیے انکوائری کمیٹی کی رپورٹ کو منظر عام پر آنا چاہیئے۔

عمران خان تحریک انصاف کی مرکزی مجلس عامہ کے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کر رہے ہیں انہوں نے کہا کہ اجلاس میں ملکی مسائل پرتبادلہ خیال کیاگیا اور اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ 11جون کو انٹرپارٹی الیکشن کرائے جا ئیں گے اور اوور سیز پاکستانیوں کے ووٹ سےمتعلق سپریم کورٹ سے رجوع کرنے کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ڈان لیکس میں وہ زبان استعمال کی گئی جومودی پاکستان کے خلاف استعمال کرتا ہے جب کہ ڈان لیکس کا معاملہ میمو گیٹ سے بھی زیادہ حساس ہے اور مسلم لیگ (ن) بھی میمو گیٹ پر سپریم کورٹ چلی گئی تھی لیکن ڈان لیکس پر منہ چھپائے پھر رہی ہے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ مسلم لیگ (ن) میرے اثاثوں سے متعلق مسلسل جھوٹ بول رہی ہے جب کہ بنی گالہ بنگلے کی خرید فروخت سے متعلق مکمل منی ٹریل سپریم کورٹ میں بھی موجود ہے اور میرےاثاثوں کی تفصیلات پی ٹی آئی کی ویب سائٹ پرموجودہے لہٰذا مجھے کسی قطری کی مدد کی ضرورت نہیں رہے گی۔

انہوں نے کہا کہ 2018 کا الیکشن ویسے نہیں ہونے دیناجیسے2013 میں ہوئے تھے اس لیے مطالبہ کرتے ہیں کہ آئندہ الیکشن نیوٹرل امپائر کے ذریعے ہونے چاہئیں۔

چیئر مین تحریک انصاف نے کہا کہ پوری قوم پانامالیکس میں جےآئی ٹی کی جانب دیکھ رہی ہے اور شفاف تحقیقات کے لیے ضروری ہے کہ جےآئی ٹی کی سماعت کھلی ہونی چاہیے تاکہ عوام کوحقائق کاپتہ چلے اور مکمل میٹنگ نہیں آسکتی تو ہر 2 ہفتے کے بعد صورتحال عوام کے سامنے رکھنی چاہیے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں