The news is by your side.

Advertisement

کے پی کے میں ضم ہوئے بغیر فاٹا میں اصلاحات ممکن نہیں، عمران خان

اسلام آباد: تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے کہا ہے کہ فاٹا کو خیبر پختونخوا میں ضم کیے بغیر وہاں اصلاحات اور تعمیر نو ممکن نہیں۔

یہ بات انہوں نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ایک پیغام میں کہی۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی حکومت نے کابینہ اجلاس میں فاٹا سے متعلق امور کو ایجنڈے سے نکال کر نہایت افسوس ناک کام کیا ہے جس کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے۔

اپنے پیغام میں اُن کا کہنا تھا کہ حکومت کو فاٹا سے متعلق امور ترجیحی بنیادوں پر حل کرنا چاہیے اور فاٹا کے عوام کے خدشات کو جلد از جلد دور کیا جانا چاہیے کیوں کہ یہ معاملہ ملکی وحدت اور استحکام کا ہے۔

چیئرمین تحریک انصاف نے اپنے ایک اور پیغام میں کہا کہ فاٹامیں 60 لاکھ لوگوں کی زندگی تباہ ہوچکی ہے اس لیے حکومت کواس مسئلے پر فوری توجہ دینی چاہیے اور فاٹا کو کے پی کے میں ضم کردینا چاہیے کیوں کہ خیبر پختونخوا میں ضم ہوئے بغیر فاٹا میں اصلاحات اور تعمیر نو ممکن نہیں۔

واضح رہے کہ فاٹا کی تعمیت و ترقی اور خو شحالی کے لیے سب ہی حکومتوں نے کچھ نہ کچھ اقدامات کیے ہیں تاہم وہ ناکافی ثابت ہوئے اور تا حال وفاق کے زیر انتظام علاقہ میں پولیٹیکل ایجنٹ حکومت اور انتظامیہ کے درمیان پل کا کردار ادا کرتا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں