imran khan says we are watching what PPP announce tomorrow
The news is by your side.

Advertisement

دیکھتے ہیں کل پیپلز پارٹی کیا اعلان کرتی ہے، عمران خان

اسلام آباد : تحریکِ انصاف کے چیئر مین عمران خان نے کہا ہے کہ پاکستان کے نظامِ انصاف میں صرف کمزوروں کی پکڑ ہوتی ہے اسی لیے عوام کا خیال ہے کہ نواز شریف کو پاناما کیس میں سزا نہیں ہو گی۔

اسلام آباد میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے سربراہ تحریک انصاف عمران خان نے کہا کہ پہلی بار ایسا ہورہا ہے کہ کمزوروں کے بجائے ملک کی طاقتور ترین شخصیت کا احتساب ہونے جا رہا ہے ورنہ اس سے پہلے صرف غریبوں اور کمزوروں کو سزائیں ملتی تھیں۔

انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کے دھرنے اور مارچ کی بدولت آج امید ہو چلی ہے کہ وزیراعظم کی تلاشی لی جائے گی اور ان کے اہل خانہ سمیت کڑا احتساب ہوگاورنہ پاناما کیس کب کا ختم ہو چکا ہوتا۔

پاکستان پیپلز پارٹی کے چار مطالبات کے حوالے سے عمران خان کا کہنا تھا کہ کل 27دسمبر ہے، دیکھتے ہیں پیپلز پارٹی کیا اعلان کرتی ہے، لوگوں بہت سے امیدیں لگا لی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ جب بھی حکومت قانون توڑتی ہے تو اپوزیشن کو جواب لینا ہو تاہے ، ثبوت دینا اپوزیشن کا نہیں تحقیقاتی اداروں کا ہے کیوں کہ آف شور کمپنیوں کے لیے جو اربو ں روپے باہر گئے وہ عوام کا پیسہ ہے جس کا حکمرانوں کو حساب دینا ہوگا۔

چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے نیب کے قانون پلی بارگین کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم کے خلاف نیب میں 12 مقدمات درج ہیں، اگر نیب درست طریقہ اپناتی تو کرپشن نہ بڑھتی، نیب پاکستان میں کرپشن بڑھا رہی ہے، پاکستان کی تاریخ میں پاناما اہم کیس ہے۔

چیئرمین عمران خان نے وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار کے بیان کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ نیب کو سپریم کورٹ کے ماتحت ہونا چاہیے اور سپریم کورٹ ہی نیب کے چیئرمین کی تعیناتی کرے تو شفافیت برقرار رہ سکتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کا المیہ ہے لوگ کہتے ہیں نواز شریف کو سزا نہیں ہو گی ،پاکستان کا نظام صرف کمزوروں کو پکڑتا ہے ۔چیئر مین تحریک انصاف نے مزید کہا کہ یہودی لابی پہلے ہی پاکستان کے ایٹمی پروگرام کے خلاف لگی ہوئی ہے ،ایسے میں خواجہ آصف کے نیو کلیئر حملے سے متعلق بیان سے پاکستان کی بدنامی ہوئی ۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں