The news is by your side.

Advertisement

کراچی کے مسائل کا حل بلدیاتی نظام کو طاقتور بنانے میں ہے:عمران خان

کراچی : پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان دو روزہ دورے پر کراچی میں میڈیا سے گفتگو کے دوران کہا کہ کراچی کے مسائل بلدیاتی نظام کو طاقتور بنانے سے حل ہوں گے۔

تفصیلات کے مطابق عمران خان نےکراچی پریس کلب میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سب سے بہترنظام خیبر پتونخوا میں ہے اور خیبر پختونخوا کی پولیس پورے پاکستان کے لیے مثالی ہے۔

عمران خان نے کراچی کے مسائل پر بات کرتے ہوئے کہا کہ کراچی میں بلدیاتی حکومت کے پاس اختیارات ہی نہیں ہیں اور عوام کا پیسہ بھی ان پر خرچ نہیں کیا جارہا ہے، کراچی کے مسائل کا حل صرف بلدیاتی نظام کو طاقتور بنانے میں ہیں۔

انہوں نے کہا کہ کراچی میں حکومت کرنے والی ہر پارٹی نے شہر کی صورتحال کر بہتر بنانے کے بجائے صرف پیسہ بنایا ہے، لیکن ہم کراچی سے پیسہ نہیں بنائیں گے بلکہ کراچی کو مکمل منصوبہ بندی کے تحت مسائل سے نکال کر مثالی شہر بنائیں گے۔

آج خیبر پختونخوا میں پولیس کا نظام مثالی ہے جس کی کوششوں سے صوبے کی دہشت گردی میں واضح کمی سے ہر طرف امن و امان ہے جس کی مثال نواز شریف کا کے پی کے میں آکر تقریر کرنا ہے۔

چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ سندھ میں کون سا ایسا ادارہ ہے جس کو سندھ حکومت نے ٹھیک کیا گیا ہو، پولیس اور تعیلم کے ںظام کا بیڑاغرق کر دیا ہے، ان لوگوں کو صرف پیسے سے غرض ہے۔

سندھ حکومت کراچی میں پولیس کا نظام ڈلیور ہی نہیں کرسکی اس لیے رینجرز کو کراچی میں سکیورٹی کے معاملات سنبھالنا پڑے، پولیس کو یہاں صرف اپنی طاقت اور مظلوم لوگوں پر جھوٹی ایف آئی آروں کے لیے استعمال کیا جاتا ہے اسی لیے پولیس کے نظام کو کو ٹھیک نہیں کیا جاتا تاکہ ان سے غلط کام کروایا جاسکے۔

عمران خان نے کہا کہ سندھ سے جیت کر حکومت میں آنے والے حکمرانوں کو کراچی شہر کی کوئی پرواہ نہیں ہے، اس لیے شہر سے نکلنے والا سیورج کا گندا پانی کھیتوں میں دیا جارہا ہے،کراچی کو بہتر بنانے کے لیے تبدیلی کی ضرورت ہے وہ تبدیلی پی ٹی آئی لائے گی۔

انہوں نے کہا کہ آج ملک پر تاریخی قرضوں کا بوجھ ہے پاکستان کا پر شہری ایک لاکھ 30 ہزار کا مقروض ہے، ملک کی معیست کو موجودہ حکمرانوں نے اپنی جیبیں بھرنے کی خاطر تباہ و برباد کر دیا ہے۔

پاکستان کی عوام پر مہنگائی کا بوجھ بڑھتا جارہا ہے اور دونوں حکمران خاندان مزید امیر ہوتے جارہے ہیں، ملک کی موجودہ صورتحال کے ذمہ دار شریف اور زرداری خاندان ہیں، 2018 کے الیکشن میں ان دونوں کی وکٹیں گریں گی۔

سینیٹ الیکشن میں بلوچستان کے سینیٹر کا چیئرمین سینیٹ منتخب ہونے اور نواز شریف کے امیدوار کا ہارنا پاکستان کی بہت بڑی جیت ہے۔

بلاول بھٹو کے حوالے سے کئے گئے سوال پر عمران خان کا کہنا تھا کہ بچے کو کیا جواب دوں جس کو یہ نہیں پتہ کہ پاکستان میں کیا چل رہا ہے،اس کو جو لکھ کر دیا جاتا ہے وہ خطاب میں بول دیتا ہے۔

 چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان دو روزہ دورے کے دوران شہر کے مختلف علاقوں میں قائم پارٹی کی رکنیت سازی کیمپوں کا دورہ اور کارکنوں سے خطاب کریں گے۔


ن لیگ کا سینیٹ چیئرمین بن جاتا، تو ادارے تباہ ہوجاتے‘ عمران خان


خیال رہے کہ گزشتہ روز لاہور میں‌ پی ٹی آئی کے سوشل میڈیا سمٹ سے خطاب کرتے ہوئے پی ٹی آئی چیئرمین عمران خان کا کہنا تھا کہ اگر ن لیگ کا چیئرمین سینیٹ آتا، تو چوری اور کرپشن کی اجازت کا قانون بنا دیا جاتا۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ آج ہمیں‌ ادارے مضبوط اور انسانوں پرپیسہ خرچ کرنے کی ضرورت ہے، نوجوانوں کو بھرپور جدوجہد کرنی پڑے گی، ہم سوشل میڈیا کے ذریعے کے مخالفین کا مقابلہ کریں گے۔


عمران خان نے ملتان میٹرومنصوبے کو سفید ہاتھی قراردے دیا


یاد رہے کہ دو روز قبل پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کا کہنا تھا کہ ملتان میٹرومنصوبہ عوام کے بجائے تجوریوں میں کمیشن منتقلی کے لیے بنایا گیا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں