site
stats
پاکستان

عمران خان کی منی ٹریل مکمل، کاؤنٹی سے متعلق ریکارڈ بھی مل گیا

panama case verdict

اسلام آباد : چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے کہا ہے کہ منی ٹریل سے متعلق غیر دستیاب شدہ کاغذات مل گئے جس کے بعد منی ٹریل مکمل ہو گئی ہے مزید برآں کاؤنٹی سے متعلق تمام بینکنگ دستاویزات بھی حاصل کرلی گئی ہیں جسے سپریم کورٹ میں پیش کردیا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ایک پیغام میں تحریک انصاف کے کارکنان کو خوشخبری سناتے ہوئے اعلان کیا ہے کہ منی ٹریل کی تمام بینکنگ دستاویزات حاصل کرلی گئی ہیں جنہیں وکیل کے حوالے کردیا گیا ہے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ گمشدہ دستاویزات میں فلیٹ کی ادائیگی اور کاﺅنٹی کی ادائیگیوں کا بینکنگ ریکارڈ، سسکس اور کیری پیکر سیریز کی بینکنگ ٹریل شامل تھیں جنہیں حاصل کرلیا گیا ہے اور اب مکمل منی ٹریل کو اپنے وکیل کے ذریعے عدالت عظمیٰ میں پیش کردیا جائے گا۔

انہوں نے وزیاراعظم نواز شریف اور ان کے حمایت کرنے والوں کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ میں نوازشریف سمیت تمام پاکستانی لیڈرز کو چیلنج کرتا ہوں کہ میری طرح کی منی ٹریل کی پیش کر کے دکھائیں۔

قبل ازیں تحریک انصاف کے مرکزی رہنما جہانگیر ترین نے بھی اپنی ایک ٹوئٹ کے ذریعے کارکنان کو خوشخبری سنائی تھی کہ عمران خان کی کاؤنٹی کھیلنے سے حاصل ہونے والی رقوم اور ان سے خریدے گئے فلیٹ سے متعلق تمام بینکنگ دستاویزات موصول ہو گئے ہیں۔

خیال رہے کہ لندن فلیٹس سے متعلق کیس میں *عمران خان نے اپنا تحریری جواب میں سپریم کورٹ کو بتایا تھا * کہ ان کے پاس مکمل منی ٹریل نہیں ہے کیوں کہ کاؤنٹی بیس سے قبل کا ریکارڈ محفوظ نہیں رکھتی تاہم اب تحریک انصاف کی جانب سے بینکنگ ریکارڈ ملنے کااعلان کیا گیا ہے۔

قبل ازیں گزشتہ روز کیے گئے ٹوئٹ میں جہانگیر ترین کا کہنا تھا کہ اگر اثاثے قانونی طور پر بنائے جائیں تو اسے ثابت بھی کیا جاسکتا ہے اور عمران خان کا معاملہ بھی ایسا ہی ہے۔

رہنما تحریک انصاف جہانگیر ترین نے مزید کہا کہ عمران خان نے پورا منی ٹریل دکھا دیا ہے، آمدن حلال اور جائز تھی چند گھنٹوں میں ثابت کردیا اور ہم نے وزیراعظم نوازشریف سے بھی ایسی ہی دستاویزات تقاضا کیا تھا لیکن وہ ناکام رہے۔


 جمائما نےعمران خان کی منی ٹریل سے متعلق 15 سال پرانا ثبوت ڈھونڈ نکالا*


جہانگیر ترین نے کہا کہ قومی خزانہ لوٹنے والے جے آئی ٹی پر حملوں میں مصروف رہے لیکن پارلیمان، سپریم کورٹ اور جے آئی ٹی سمیت کہیں بھی سچ نہ بول سکے کیوں کہ آمدن کے ذرائع جائز نہیں تھے تو کیسے منی ٹریل ثابت ہوسکتی تھی؟

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top