The news is by your side.

Advertisement

نواز شریف نےچوری نہیں کی توتلاشی سےکیوں ڈررہے ہیں،عمران خان

لاہور :‌پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان مختصر دورے پر لاہور پہنچ گئے ہیں جہاں وہ چار مخلتف تقریبات میں شرکت کریں گے۔

تفصیلات کے مطابق تحریک انصاف کے چیرمین آج دوپہر ایک بجے لاہور کے رائل پام پہنچیں گے جہاں کارکنان سے خطاب کریں گے اور 30 اکتوبر کو ہونے والے دھرنے میں بھرپور شرکت کے لیے پروگرام ترتیب دیں گے۔

لاہور ایئر پورٹ پرمیڈیا سے گفتگو کے دوران چیرمین عمران خان نے وزیراعظم کو مخاطب کرتے ہوئے سوال پوچھا کہ اگرنواز شریف نے چوری نہیں کی تو تلاشی دینے میں اعتراض کیوں ہے؟

انہوں نے کہا ملک قرضوں میں ڈوب گیا ہے اور نوازشریف کے ساتھ رفقاء کرپشن کی وجہ سے اُن کے ساتھ ہیں جب کہ ہمارے ساتھ عوام ہے۔

چیرمین تحریک انصاف نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ اس بار جو دھرنا ہوگا وہ ڈی چوک کے دھرنے سے مختلف ہے اب ہم صرف پارلیمنٹ نہیں بلکہ سرکاری دفاتر تک جانے والے راستوں کو بلاک کریں گے۔

میڈیا سے گفتگو کے بعد عمران خان اپنے شیڈول کے مطابق پارٹی رہنماؤں کے اہم اجلاس میں شرکت کے لیے روانہ ہو گئے ان کے ہمراہ اعجازچوہدری اور دیگر اہم رہنما تھا۔

بعد ازاں 4 بجے انصاف پروفیشنل کے فورم سے خصوصی خطاب کریں گےاور دھرنے کو کامیاب بنانے کے لیے تحریک انصاف کے اعلی تعلیم یافتہ اور اپنے اپنے شعبے میں ماہر اراکین سے اہم مشاورت کریں گے۔

اسی سے متعلق : پی ٹی آئی کا 30 اکتوبر کو اسلام آباد بند کرنے کا اعلان 

اپنے دورے کے آخر میں شام ساڑھے 6 بجے عمران خان اپنی جماعت کی ”رورل بادی” سے خطاب کریں گے اور تنظیم کی نچلی سطح پر کارکنان کو دھرنے میں شرکت کے لیے لائحہ عمل تیار کریں گے۔

واضح رہے پانامہ پیپرز میں وزیر اعظم اور اُن کے اہل خانہ کے نام آنے کا بعد پاکستان تحریک انصاف نے 30 اکتوبر کو دارلخلافہ بند کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

بھرپور دھرنا دینے کا مقصد وزیر اعظم کو مستعفی ہونے یا خود کو احتساب کے لیے پیش کرنے تک جاری رکھا جائے گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں