پاکستان میں جمہوریت کے نام پر ڈکٹیٹر شپ ہے، عمران خان -
The news is by your side.

Advertisement

پاکستان میں جمہوریت کے نام پر ڈکٹیٹر شپ ہے، عمران خان

کراچی: عمران خان نے کہا کہ پاکستان میں جمہوریت کے نام پر ڈکٹیٹر شپ ہے ، ملک میں غریب مر رہا ہے جبکہ حکمرانوں کے اثاثے کئی گنا بڑھ گئے، پنجاب کی آبادی بارہ کروڑ لیکن تمام فیصلے لاہور میں ہوتے ہیں ۔

کراچی میں انصاف سٹوڈنٹس فیڈریشن کی تقریب سے خطاب کے دوران عمران خان ایک بار پھر موجودہ جمہوریت سے نالاں نظر آئے ۔ کہتے ہیں حکمرانوں کے ذاتی مفادات ہیں ، یہ لوگ حکومت میں آکر اپنے کاروبار بڑھاتے ہیں ۔

عمران خان نے دعویٰ کیا کہ خیبر پختونخوا میں پی ٹی آئی کی کارکردگی دیکھ کر اگلے الیکشن میں انہیں انتخابی مہم چلانے کی ضرورت نہیں پڑے گی ۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ دھاندلی کا مقابلہ نہیں کریں گے تو اسٹیٹس کو بیٹھا رہے گا جس الیکشن کمیشن پر خود الزامات ہوں وہ اپنا احتساب کیسے کرسکتا ہے ۔

دوسری جانب تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کا کہنا ہے کہ خیبر پختوانخواہ میں اسٹریٹ چلڈرن کیلئے کرکٹ اکیڈمی قائم کررہے ہیں وسیم اکرم کے ساتھ ملکر کرکٹ اکیڈمی میں بچوں کو کرکٹ کی تربیت دیں گے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے یوسف بیگ مرزا کی رہائش گاہ پر ناشتے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وسیم اکرم کو سیاست مشورہ نہیں دونگا وہ ایک اچھے کھلاڑی ہیں انکی صلاحیتوں کو خیبر پختوانخواہ کے چلڈرن کرکٹ کی حیثیت سے استعمال کریں گے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ جتنی رکاوٹیں کھڑی کردیں لیاری کا دورہ ضرور کرونگا جلسے کرنے نہیں آیا کارنر میٹنگ سے خطاب کررہا ہوں ہم پر مقدمات قائم کئے جارہے ہیں عمران خان کا کہنا تھا کہ فاٹا کو کے پی کے میں شامل کرنے کیلئے فاٹا کے عمائدین سے مشاورت جاری ہے اور وہاں کیلئے بھی قانون سازی کریں گے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں