The news is by your side.

Advertisement

ہندوتوا ذہنیت کے فروغ میں بھارتی انتہا پسند تنظیم اندھی ہوگئی

نئی دہلی: بھارت میں ہندوتوا نظریے کے فروغ میں انتہا پسند تنظیم ‘ہندو مہاسبھا’ اندھی ہوگئی، مہاتما گاندھی کے قاتل ناتھو رام گوڈسے کے نام پر اسٹڈی سینٹر قائم کردیا۔

تفصیلات کے مطابق بھارتی ریاست مدھیہ پردیشن میں ناتھو رام گوڈسے سے منسوب ایک اسٹڈی سینٹر کھولا گیا ہے جہاں بھارت کی آزادی میں اہم کردار ادا کرنے والے کانگریس کے بانی مہاتما گاندھی کے قاتل ناتھو رام گوڈسے کو ہیرو کے طور پر پڑھایا جاتا ہے، اور اس کی پوجا بھی کی جاتی ہے، ہندو مہاسبھا نے قاتل کو محبت وطن قرار دے دیا۔

ناتھو رام گوڈسے، تصویر آئی اے این ایس

ہندو مہاسبھا کے جے ویر نامی رہنما کا کہنا ہے کہ نوجوان نسل کو یہ جاننا چاہیے کہ ملک کو بچانے کے لیے گوڈسے کے ساتھ ساتھ سبھی محبان وطن نے کس طرح کی قربانیاں دیں۔

اسٹڈی سینٹر میں ناتھو رام کے علاوہ دیگر متنازع شخصیات کے بارے میں ذہنی سازی کی جاتی ہے، بھارت میں ہندوتوا ذہنیت کو فروغ دینے اور حب الوطنی کے نام پر تشدد کو اکسانے پر تنظیمیں کام کررہی ہیں۔

ہندو مہاسبھا کی زبان میں یہ اسٹڈی سنٹر جسے’گیان شالہ‘ کہا جاتا ہے جو گوالیر میں کھولا گیا ہے اور اس میں ہندو مہاسبھا ناتھو رام گوڈسے کو ہیرو بنا کر خودساختہ حب الوطنی کے قصے گڑھے جارہے ہیں۔ مذکورہ ذہنیت کے فروغ کے لیے باقاعدہ ورک شاپ کا انعقاد کیا جائے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں