The news is by your side.

Advertisement

اس گاؤں کو سیٹیوں والا دیہات کیوں کہا جاتا ہے؟ دلچسپ معلومات

سیٹیوں والا دیہات جہاں ہر جنم لینے والے بچے کا نام گانے پر رکھا جاتا ہے اور یہ گیت بھی الفاظ کے بجائے سیٹیوں کی صورت میں گنگنایا جاتا ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق بھارتی ریاست مگھلاوا میں واقع گاؤں کونگ تھونگ کو سیٹیوں والے دیہات کی وجہ سے عالمی سطح پر بہت شہرت مل رہی ہے جب کہ اقوام متحدہ بھی اس گاؤں کو مہمان نوازی، خوبصورتی، اور قدرتی مناظر کی وجہ بہترین سیاحتی مقام قرار دے چکا ہے۔

اس گاؤں کی کل آبادی 650 افراد سے زائد ہے اور یہاں لوگوں کا ایک باضابطہ نام ہوتا ہے جبکہ ایک نام گیت پر رکھا جاتا ہے۔

یہاں بچے کی پیدائش پر ماں کے دل میں جو گیت آرہا ہوتا ہے اسی کی دھن پر بچے کا نام رکھ دیا جاتا ہے اور اسے بلانے کےلیے گیت کے بول گانے کےلیے سیٹی بجائی جاتی ہے، جب گاؤں میں لوگ ایک دوسرے کو بلاتے ہیں تو سیٹیوں جیسی آواز گونجتی جو کانوں کو بہت بھلی لگتی ہے۔

کہا جاتا ہے کہ یہاں رہنے والے تین قبائلی سینکڑوں سال قبل جنگلات میں شکار کا ہانکا لگانے یا پھر آسیب بھگانے کے لیے سیٹیاں بجاتے تھے جو تبدیل ہوکر انسانوں کے نام رکھنے کی وجہ بھی بنا۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق گاؤں کے جوان اکثریت ملازمت کےلیے دیگر شہروں میں جاکر آباد ہورہی ہے جس کے باعث گاؤں کی آبادی میں بہت زیادہ کمی واقع ہوئی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں