The news is by your side.

Advertisement

سانحہ صفورا: عدالت کا ملٹری کورٹ فیصلے کی نقل 14 مارچ تک جمع کرانےکا حکم

کراچی:سندھ ہائیکورٹ میں سانحہ صفورا سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی، درخواست گزار کا کہنا ہے کہ ملزمان کو فوجی عدالتیں بری کرچکی ہیں، عدالت نے ملٹری کورٹ کے فیصلے کی کاپی 14 مارچ تک جمع کرانے کا حکم دے دیا.

تفصیلات کے مطابق سندھ ہائیکورٹ میں سانحہ صفورا سے متعلق کیس کے حوالے سےفوجی عدالت سے بری ملزم نعیم ساجد،سلطان قمرکی درخواست پر سماعت ہوئی.

مزید پڑھیں:سانحہ کراچی: آج ملک سوگوار، پرچم سرنگوں

دوران سماعت عدالت نے ملٹری کورٹ کے فیصلے کی کاپی 14 مارچ تک پیش کرنے کاحکم دیا، جبکہ ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے کاپی جمع کرانے کے لئے 2 ہفتے کی مہلت طلب کرلی ہے.

مزید پڑھیں:سانحہ صفورہ کیس فوجی عدالت میں چلانے کی منظوری

دوسری جانب درخواست گزار کے مطابق عدالت 29 دسمبر کو پاسپورٹ واپس دینے کا حکم دے چکی ہے، درخواست میں درج ہے کہ فوجی عدالت بری کرچکی ہے مگر فیصلے کی کاپی نہیں دی جارہی ہے.

وکیل درخواست گزار کا کہنا ہے کہ زرضمانت کے10 لاکھ روپے واپس دیئے جائیں۔

مزید پڑھیں:سانحہ صفورہ: بریت پانے والے شخص کی پاسپورٹ ‘ زرضمانت واپسی کی درخواست

یاد رہے کہ نعیم ساجد کو سانحہ صفورہ میں ملزم نامزد کیا گیا تھا تاہم ملٹری کورٹ نے اسے بری کردیا تھا‘ نعیم نے درخواست میں کہا ہے کہ بریت کے بعد اس کی جانب سے جمع کرایا زرِ ضمانت اور پاسپورٹ اسے لوٹایا جائے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں