کشمیر میں پاکستان کے یومِ آزادی کے موقع پر حریت رہنماؤں کی گرفتاریاں -
The news is by your side.

Advertisement

کشمیر میں پاکستان کے یومِ آزادی کے موقع پر حریت رہنماؤں کی گرفتاریاں

سری نگر: بھارتی فوج سینتیس روز سےمقبوضہ جموں کشمیرکومفلوج کئے ہوئےہے،پاکستان کےیوم آزادی پرحریت رہنماؤں کے ریفرنڈم مارچ پربھارتی فوج تلما اٹھی۔طاقت کا بے دریغ استعمال،حریت رہنماؤں کوگرفتار کرلیاگیا۔

قبوضہ کشمیرمیں بھارت کی ریاستی دہشت گردی کا سلسلہ جاری ہے اور حریت رہنماؤں کی جانب سے پاکستان کے یوم آزادی پرریفرنڈم مارچ کے اعلان پر بھارتی فوج نے مظالم مزید بڑھادئیے۔

مارچ ناکام کرنےکیلئے حریت رہنماؤں سید علی گیلانی اور میر واعظ کو گرفتارکرلیا گیا،حکومت پاکستان کی جانب سے یوم آزادی کو کشمیریوں کے نام کرنے پر بھارتی میڈیا پر واویلہ ہے اور بھرپورزہر افشانی کی جارہی ہے۔

وادی کومفلوج کئےسینتیس روز گزرگئےمگر کشمیریوں کے حوصلے پست نہ ہوئے۔ کرفیو کے ساتھ میڈیا،انٹرنیٹ،موبائل سروس بھی بدستور بند ہے۔

واضح رہے کہ وادی کشمیر میں برہان الدین وانی نامی مقامی کمانڈر کی شہادت کے بعد سے تحریک آزادی ایک بار پھر اپنے عروج پر پہنچ چکی ہے اور کشمیری عوام بھارتی ظلم و جبر اور جارحیت کے خلاف سڑکوں پر سراپا احتجاج ہیں۔

بھارتی افواج‘ آزادی کی اس لہر کو دبانے کے لیے انسانی حقوق کے ہر ضابطے کی دھجیاں اڑا رہیں ہیں ، رہنماؤں کو گرفتار کیا جارہا ہے ، لوگوں کے چہرے پیلٹ گن کی گولیوں سے ادھیڑے جارہے ہیں اور غیر ضروری گرفتاریوں کا سلسلہ جاری ہے لیکن کشمیری عوام تمام تر نامساعد حالات میں بھی پاکستان زندہ باد کے نعرے لگارہے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں