مقبوضہ کشمیر: بھارتی حکومت کا مذہبی اور پاکستانی چینل بند کرنے کا حکم
The news is by your side.

Advertisement

مقبوضہ کشمیر: بھارتی حکومت کا مذہبی اور پاکستانی چینل بند کرنے کا حکم

سری نگر: مقبوضہ کشمیر کی کٹھ پتلی انتظامیہ نے کیبل آپریٹرز کو پاکستانی چینل کی نشریات فوری بند کرنے کا حکم جاری کر دیا۔

کشمیری میڈیا کے مطابق مقبوضہ وادی میں بھارتی انتظامیہ نے تمام کیبل آپریٹرز کو پاکستانی اور اسلامی چینل کی نشریات فوری طور پر بند کرنے کا حکم جاری کیا۔

مقبوضہ کشمیر میں کیبل آپریٹر ایسوسی ایشن کے صدر امجد نور نے انتظامیہ کو متنبہ کیا کہ میڈیا پر قدغن کسی صورت منظور نہیں ہے۔

اُن کا کہنا تھا کہ ’بالخصوص حج کے موقع پر مذہبی چینلز کی بندش سے بہت نقصان ہوگا کیونکہ عوام اسلامی پروگرام دیکھنا چاہتے ہیں، اس طرح کے اقدامات سے شہری ہماری ساکھ اور آزاد میڈیا سے متعلق سوالات کریں گے‘۔

امجد نور کا کہنا تھا کہ ’انتظامیہ کی جانب سے چینلز کی بندش کے بعد چالیس فیصد کاروبار متاثر ہوگا اور لوگ اپنے گھروں سے کیبل سروس ہٹا لیں گے، اس طرح کے طریقے جدید دور میں کامیاب نہیں ہوسکتے‘۔

کیبل آپریٹر نے اسلامی چینلز کی بندش پر شدید احتجاج کیا اور کہا کہ ’اگر حکومت یہ سوچ رہی ہے کہ پابندی سے لوگوں کو روکا جاسکتا ہے مگر یہ اُس کی بھول ہے کیونکہ عوام سیٹلائٹ ٹی وی کی طرف چلے جائیں گے‘ْ

دوسری جانب کشمیریوں نے کٹھ پتلی انتظامیہ کے حکم کو مسترد کرتے ہوئے اس کے خلاف احتجاج کیا، سری نگر سمیت مختلف علاقوں میں عوام نے حکومت کے خلاف مظاہرہ بھی کیا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں