The news is by your side.

Advertisement

بھارت میں بربریت کا ایک اور اندوہناک واقعہ : لڑکی پر مظالم کی انتہا

مدھیہ پردیش : بھارتی معاشرے میں دور جاہلیت کی ایک اور مثال سامنے آئی ہے، زیادتی کا شکار ہونے والی لڑکی ہی اس کی قصور وار ٹھہرائی گئی، گاؤں والوں نے رسیوں سے باندھ کر بدترین تشدد کیا۔

تفصیلات کے مطابق بھارت میں زیادتی کا شکار ہونے والی لڑکی پر مزید ظلم و ستم کے پہاڑ توڑ دیے گئے، رسیوں سے باندھ کر ملزم کے ساتھ پریڈ کرائی گئی۔

ریاست مدھیہ پردیش میں21سالہ لڑکے نے16 سالہ لڑکی کو مبینہ طور پر ذیادتی کا نشانہ بنایا، گاؤں کے لوگوں نے مشتبہ شخص اور متاثرہ لڑکی کو رسیوں سے باندھ کر بدترین تشدد کیا اور پورے گاؤں والوں کے سامنے پریڈ بھی کروائی۔

بھارتی میڈیا کے مطابق ریاست مدھیہ پردیش کے قبائلی علاقے علی راج پور میں16 سالہ لڑکی کو مبینہ طور پر زیادتی کا نشانہ بنایا گیا تھا اور اتوار کے روز اس کے ہاتھ رسیوں سے باندھ کر اسے گلیوں میں گھمانے اور اس پر تشدد کرنے کی ویڈیو سامنے آئی۔

رپورٹ کے مطابق گاؤں والوں نے لڑکی کو زیادتی کا نشانہ بنانے والے لڑکے کو بھی تشدد کے بعد رسیوں سے باندھ کر گلیوں میں گھمایا۔

اطلاعات کے مطابق لڑکی کو رسیوں سے باندھ کر پریڈ کروانے میں لڑکی کے گھر والوں کی مرضی بھی شامل تھی اور مشتعل ہجوم دونوں کو پریڈ کروانے کے ساتھ نعرے بازی بھی کر رہا تھا۔

واقعے کی اطلاع ملتے ہی پولیس نے موقع پر پہنچ کر مرکزی ملزم سمیت6 افراد کو رنگے ہاتھوں گرفتار کرکے لڑکی کو اپنی تحویل میں لے لیا۔

پولیس نے واقعے کے دو مقدمات درج کیے ہیں، ایک مقدمہ لڑکی کو زیادتی کا نشانہ بنانے والے لڑکے کے خلاف جبکہ دوسرا مقدمہ لڑکی کے گھر والوں اور گاؤں والوں کے خلاف متاثرہ لڑکی پر تشدد کرنے اور اسے پریڈ کروانے کا درج کیا گیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں