The news is by your side.

Advertisement

جہیز نہ لانے پر طعنے؛ خاتون نے جان دیدی

بھارت کے ضلع اجمیر میں انورادھا نامی خاتون نے جہیز نہ لانے پر سسرالیوں کے تشدد سے تنگ آکر اپنی زندگی کا خاتمہ کرلیا

جہیز ایک ناسور کی طرح معاشرے میں سرایت کرگیا ہے جس کے باعث آئے دن دل دہلانے والے واقعات رونما ہوتے ہیں ایسا ہی ایک واقعہ بھارت میں پیش آیا جہاں خاتون نے سسرالیوں کے مظالم سے دلبرداشتہ ہوکر اپنی 2 سالہ بچی کے سامنے خودکشی کرلی۔

یہ دلخراش واقعہ راجھستان کے ضلع اجمیر میں شیو ساگرکالونی میں پیش آیا جہاں انورادھا نامی خاتون کو سسرالیوں نے جہیز کے بے جا مطالبات پر اتنے ذہنی وجسمانی تشدد کا نشانہ بنایا کہ اس مظلوم کے پاس اپنی زندگی ختم کرنے کے سوا کوئی راستہ نہ بچا۔

اس حوالے سے انورادھا کے بھائی سرویش سومانی کا کہنا ہے کہ انورادھا کی سسرال والے اس کی بہن کو جہیز کے لیے مسلسل جسمانی اور ذہنی طور پر ٹارچر کرتے رہتے تھے۔

سرویش کے مطابق اس کا بہنوئی انیرودھ مالپانی جرمنی میں کام کرتا ہے لیکن اس کا رویہ بھی انورادھا کے ساتھ اچھا نہ تھا جس سے پریشان ہوکر اس کی بہن نے خودکشی کی۔

واضح رہے کہ انورادھا کی 3 سال قبل انیرودھ سے شادی ہوئی تھی جس سے ان کی 2سالہ بیٹی بھی ہے۔

ادھر اس معاملے پر اجمیر نارتھ پولیس کا کہنا ہے کی سی او چھوی شرما کا کہنا ہے کہ انورادھا کیشو کی پوسٹ مارٹم رپورٹ آنے کے بعد آگے کارروائی کی جائے گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں