The news is by your side.

Advertisement

بھارت بحرہند کو جوہری ہتھیاروں سے آلودہ کررہا ہے: ترجمان دفترخارجہ

اسلام آباد: ترجمان دفتر خارجہ عائشہ فاروق کا کہنا ہے کہ بھارت بحرہند کو جوہری ہتھیاروں سے آلودہ کررہا ہے، بھارت ہتھیاروں کا دنیا میں سب سے بڑا درآمدی ملک بن گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ہفتہ وار بریفنگ میں ترجمان دفترخارجہ کا کہنا تھا کہ پاکستان ہر قسم کی جارحیت سے نمٹنے کے لیےہر وقت تیار ہے، کشمیر میں بھارتی غیر قانونی قبضے کو آج 300دن ہو گئے، بھارت نےلائن آف کنٹرول پربلا اشتعال فائرنگ جاری کررکھی ہے، مقبوضہ کشمیر میں عید الاضحی پر پر نماز کی پابندی کی مذمت کرتے ہیں۔

پاکستان کا کہنا ہے کہ بھارتی حکومت کے اقدامات اقلیتوں کےلیےخطرناک ہیں، سب کو علم ہے بھارت جوہری ہتھیاروں کو وسعت دے رہا ہے، بھارت میزائل سسٹم سےجنگی تیاریوں میں اضافے میں بھی مصروف ہے، بھارت ضرورت سےبڑھ کرفوجی صلاحیت میں اضافہ کررہاہے، بھارت دنیا کا ہتھیار درآمد کرنے والا دوسرا بڑا ملک بن گیا۔

عائشہ فاروق نے کہا کہ اقوام متحدہ نوٹس لے یہ عالمی قوانین کی خلاف ورزی ہے، بھارت کی جانب سے رافیل طیاروں کی خریداری کی خبریں سامنے آئیں، ہمارے فرانس سمیت دیگر ممالک سے دوطرفہ تعلقات ہیں، ان ممالک سے مختلف ایشوز پر بات چیت ہوتی رہتی ہے، رافیل طیاروں کی بھارت کو فروخت کا معاملہ تاحال فرانس سے نہیں اٹھایا گیا۔

’جارحانہ عزائم اور بےجا ہتھیاروں کی خریداری جنوبی ایشیا کے امن کیلئےخطرہ ہے، عالمی برادری بھارتی عزائم کا نوٹس لے، بھارت کے عزائم سے جنوبی ایشیامیں ہتھیاروں کی دوڑمیں اضافہ ہوگا، پاکستان کم سے کم دفاعی صلاحیت کے اصول پر کارفرما ہے، پاکستان بھارتی جارحانہ عزائم سے ہرگز غافل نہیں ہے‘۔

ترجمان نے کہا60دن میں کلبھوشن کے وکیل کے لیے بھارت نے ہائیکورٹ سے رجوع کرنا تھا، لیکن بھارت کی جانب سے ایسا نہیں کیا گیا، کلبھوشن کو تیسری قونصلررسائی پر بھارت کا تاحال جواب نہیں آیا، عالمی عدالت انصاف کےفیصلے پرعالمی عدالت انصاف آرڈیننس لائے، بی جے پی کی ہندوتوا ایجنڈے کی حکومت خطے کے امن کے لیے خطرہ ہے۔

ترجمان دفترخارجہ عائشہ فاروق نے مزید کہا کہ زلمے خلیل زاد کے پاکستان آمد کی مصدقہ تاریخ کا علم نہیں ہے، پاکستان افغانستان میں سیزفائر اعلان کا خیرمقدم کرتا ہے، دوحہ میں طالبان کے ساتھ مذاکرات ہورہے ہیں، قیدیوں کے تبادلے سمیت فریقین کو وعدوں کی پاسداری کرنی چاہیے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں