The news is by your side.

Advertisement

بھارت کا پہلا مسافربردار طیارہ تل ابیب پہنچ گیا

تل ابیب/ نئی دہلی: بھارت کی سرکاری فضائی کمپنی  کی اسرائیل کے لیے پہلی پرواز سعودی عرب کی فضائی حدود کا استعمال کرتے ہوئے اپنی منزل پر پہنچ گئی۔

تفصیلات کے مطابق بھارت کی سرکاری فضائی کمپنی ایئر انڈیا نے اسرائیل جانے کے لیے سعودی عرب کی فضائی حدود کا استعمال کرتے ہوئے اپنی پہلی پرواز مکمل کرلی ہے۔

جمعرات کو ایئر انڈیا کی دہلی سے اڑان بھرنے والی پرواز اے آئی 139 تل ابیب کے بن گوريان ہوائی اڈے پر عالمی وقت کے مطابق شام سات بج کر پنتالیس منٹ پر لینڈ ہوئی۔ ہفتے میں تین پروازیں سعودی فضائی حدود کا استعمال کرتے ہوئے دہلی سے تل ابیب اور تل ابیب سے دہلی کا سفر کریں گی۔

اس موقع پراستقبال کے لیے ہوائی اڈے پرموجود اسرائیلی وزرت سیاحت ياريف ليفين کا کہنا تھا کہ ’یہ ایک نئے دور کا آغاز ہے۔

 ياريف ليفين کا کہنا تھا سعودی فضائی حدود کے استعمال سے سفری اوقات میں دو گھنٹے کی کمی کے ساتھ ساتھ ٹکٹ کے کرائے میں بھی واضح کمی ہوگی۔

اسرائیل کے وزیر برائے ٹرانسپورٹ يسرائيل كاٹس کا کہنا ہے کہ ایئر انڈیا کی دہلی سے تل ابیب آنے والی بھارت کی پہلی پرواز اسرائیل اور سعودی عرب کے درمیان پہلا باضابطہ تعلق ہے۔

واضح رہے کہ اسرائیل کی سرکاری ہوائی کمپنی ایل عال بھارتی شہر ممبئی کے لیے پرواز کرتی ہے جس کے لیے وہ سعودی عرب اور ایران کی فضائی حدود کے بجائے بحیرۂ احمر کا راستہ اختیار کرتے ہوئے بھارت پہنچتی ہے۔ اسرائیلی فضائی کمپنی کے ترجمان کا کہنا تھا کہ ایئر انڈیا کو غیرمنصفانہ فوقیت حاصل ہوگئی ہے۔

خیال رہے سعودی عرب نے کئی دہائیوں نے اسرائیل جانے والی کمرشل پروازوں پر اپنی فضائی حدود کے استعمال پر پابندی عائد کر رکھی تھی۔

یاد رہے کہ رواں سال کے آغاز میں اسرائیلی وزیراعظم 6 روزہ دورے پر بھارت گئے تھے، اس دوران بن یامین نیتن یاہو نے بھارتی وزیراعظم نریندرمودی سے حیدرآباد ہاؤس میں ملاقات کی اوراس موقع پردونوں ملکوں کےدرمیان سول ایوی ایشن، آئل، گیس، سائبرسکیورٹی، ٹیکنالوجی، فلم پروڈکشن سمیت مفاہمت کی 9 یادداشتوں پر دستخط کیے گئے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں