The news is by your side.

Advertisement

بھارت لاک ڈاؤن : نو سالہ بچہ 900 کلومیٹر سائیکل ٹھیلہ چلا کر معذور والدین کو گھر لے آیا

بہار : نو سالہ بچے نے اپنے والدین کو سائیکل ٹھیلے پر بٹھا کر 900 کلو میٹر کی مسافت طے کی، تبارک نو دن تک سفر کرتا رہا، دیکھنے والوں کی اس کی ہمت اور جذبے کو سراہا۔

بھارت میں نافذ لاک ڈاؤن کے سبب ایک جانب جہاں عام مزدور دوسری ریاستوں سے جوق در جوق پیدل، سائیکل، موٹر سائیکل و دیگر سواریوں سے اپنے گھروں کی جانب رواں دواں ہیں تو وہیں دوسری جانب اس سفر میں کچھ ایسے باہمت اور اِرادوں کے مضبوط بچوں کے واقعات بھی سامنے آئے ہیں جسے سن کر لوگ حیرت زدہ ہیں۔

ملک بھر میں نافذ لاک ڈاؤن کے سبب ایک جانب جہاں عام مزدور دوسری ریاستوں سے جوق در جوق پیدل، سائیکل، موٹر سائیکل و دیگر سواریوں سے اپنے گھروں کی جانب رواں دواں ہیں تو وہیں دوسری جانب اس سفر میں کچھ ایسے باہمت اور اِرادوں کے مضبوط بچوں کے واقعات بھی سامنے آئے ہیں جسے سن کر لوگ حیرت زدہ ہیں۔

سوشل میڈیا پر ایک ایسا ہی ایک ویڈیو وائرل ہو رہا ہے جس میں ایک 9 سالہ معصوم بچہ نیشنل ہائی وے پر اپنے والدین کو ٹھیلے پر بیٹھا کر لے جا رہا ہے۔ اس بچے کا نام تبارک ہے اور یہ وارنسی سے ارریہ تک 900کلو،یٹر کا فاصلہ طے کر کے اپنے والدین کو ٹھیلے پر بٹھا کر لایا ہے۔

اس بچے کی ہمت اور حوصلہ کا اندازہ اس بات سے لگا سکتے کہ وہ 900 کلو میٹر مسافت طے کر کے ایک آنکھ سے معذور والدہ اور ایک پاؤں سے معذور والد کو صحیح و سلامت اپنے گھر لے آیا۔

اس حوالے سے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے تبارک نے بتایا کہ سفر میں کئی جگہوں پر پریشانی کا سامنا کرنا پڑا، حالانکہ کئی لوگوں نے ان کی مدد بھی کی۔

یاد رہے کہ اس سے قبل ریاست بہار کے ضلع دربھنگہ کی جیوتی نامی 15سالہ لڑکی نے اپنے بیمار والد کو سائیکل پر بیٹھا کر دہلی سے دربھنگہ تک کا سفر کیا تھا جس کی گونج پوری دنیا میں سنی گئی اور لوگوں نے اس کے حوصلے کو سلام کیا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں