The news is by your side.

Advertisement

لاک ڈاؤن : بھارتی لڑکی نے شادی ملتوی ہونے پر زندگی کا خاتمہ کرلیا

اننت پور : بھارتی لڑکی اپنی شادی ملتوی ہونے کا دکھ برداشت نہ کرسکی، چھت سے لٹک کر زندگی کا خاتمہ کرلیا، پولیس نے قانونی کارروائی کے بعد لاش پوسٹ مارٹم کیلئے اسپتال روانہ کردی۔

تفصیلات کے مطابق بھارت میں کورونا لاک ڈاؤن کے باعث لوگ ذہنی دباؤ کا شکار ہورہے ہیں، کچھ اسی طرح ایک واقعہ ریاست آندھرا پردیش میں پیش آیا جہاں لاک ڈاؤن کے سبب شادی کی تاریخ ملتوی ہونے کے باعث نوجوان لڑکی نے خود کو موت کے حوالے کردیا۔

بھارت کی ریاست آندھرا پردیش کے ضلع اننت پور میں ایک لڑکی جو شدید ذہنی دباؤ کا شکار تھی،  دھرمارام پولیس چوکی کے قریب میں واقع شانتی نگر علاقے میں اس لڑکی نے لاک ڈاؤن کے سبب شادی ملتوی کیے جانے کی وجہ سے خوکشی کر لی۔

واضح رہے کہ بھارت لاک ڈاؤن کے سبب کسی طرح کی ایسی تقریب جس میں مجمع اکٹھا ہونے کا خدشہ ہو حکومت کی جانب سے سخت پابندی عائد کی گئی ہے۔

بتایا جا رہا ہے کہ خوکشی کرنے والی لڑکی کا نام ہماوتی ہے ان کی منگنی کوٹھا پیٹھ کے ایک نوجوان سے طے ہوئی تھی اور ان دونوں کی شادی اسی ماہ اپریل میں ہونے والی تھی۔

تاہم ملک گیر لاک ڈاؤن کی وجہ سے یہ شادی ملتوی کردی گئی تھی، اس سے افسردہ ہوکر ہماوتی نے بیڈ روم کی چھت میں پھنڈا ڈال کر اپنی زندگی کا خاتمہ کرلیا۔

اس حوالے سے بھارتی میڈیا رپورٹ کے مطابق لواحقین نے اسے فوری طور پر اسپتال منتقل کیا جہاں ڈاکٹروں نے اسے مردہ قرار دے دیا، دوسری جانب پولیس کا کہنا ہے کہ لاش کو پوسٹ مارٹم کے لئے بھیج دیا گیا ہے اور معاملے کی تحقیقات جاری ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں