The news is by your side.

Advertisement

مقبوضہ کشمیر میں دکانیں بند جبکہ بھارت میں شراب خانے کھلے ہیں، عمرعبداللہ

سری نگر : نیشنل کانفرنس کے نائب صدر و سابق وزیراعلیٰ عمر عبداللہ نے کہا ہے کہ لاک ڈاؤن کے دوران کشمیر میں لوگوں کو ضروریات زندگی کی اشیاء ملنا مشکل ہے لیکن بعض ریاستوں میں شراب کی دکانیں کھلی ہیں۔

یہ بات انہوں نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں کہی، انہوں نے کہا کہ وادی میں گزشتہ چار ہفتوں سے مکمل لاک ڈاؤن جاری ہے ۔

جس کے باعث یہاں بازاروں میں میڈیکل اسٹوروں کے علاوہ کسی بھی دکان کو کھلنے کی اجازت نہیں دی جارہی ہے جبکہ ملک کی بعض ریاستوں میں شراب کی دکانوں کو لازمی خدمات میں شامل کیا جارہا ہے۔

عمر عبداللہ نے اپنے ایک ٹوئٹ میں طنز کرتے ہوئے کہا کہ قومی لاک ڈاؤن جہنم میں جائے، شراب نوشی جاری رہنی چاہئے، کشمیر میں گوشت اور دیگر اشیائے ضروریہ کی دکانوں کو کھلنے کی اجازت نہیں ہے جبکہ بعض ریاستوں میں شراب کی فیکٹریوں تک کو زندہ رہنے کے لئے ضروری قرار دیا جارہا ہے۔

سابق وزیر اعلیٰ نے اپنے ٹوئٹر ہینڈل پر ہندوستان ٹائمز اور ایک خبر رساں ایجنسی کے دو ٹوئٹس پوسٹ کئے ہیں جن میں کہا گیا ہے کہ میگھالیہ اور آسام حکومتوں نے شراب کی دکانوں کو پیر سے کھلے رہنے کی اجازت دی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں