The news is by your side.

Advertisement

ادھار کی معمولی رقم واپس مانگنے پر دکاندار قتل

نئی دہلی: بھارت میں 250 روپے کے مقروض شخص نے دکاندار کو ہی موت کے گھاٹ اتار دیا۔

تفصیلات کے مطابق یہ افسوس ناک واقعہ بھارتی شہر غازی آباد میں پیش آیا جہاں مقروض نے فائرنگ کرکے دکان کے مالک کو ابدی نیند سلادیا۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق دکان کا مالک اپنے مقروض شہری سے رقم کی وصولی کے لیے بار بار تقاضہ کرتا تھا جس پر شہری طعش میں آگیا اور فائرنگ کرکے دکاندار کو قتل کردیا۔

دکان کے مالک کی شناخت ارن کے نام سے ہوئی جسے گزشتہ ماہ 18 دسمبر کو قتل کیا گیا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم جیتیندا نے اپنے ساتھی دوست آکاش کی مدد سے دکان کے مالک کو موت کے گھاٹ اتارا۔ واقعہ کے بعد دونوں ملزمان فرار ہیں جن کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارے جارہے ہیں۔

خیال رہے کہ یہ واقعہ اس لیے بھی حیرت انگیز اور افسوس ناک ہے کہ صرف 250 کی خاطر دکان دار کی موت ہوئی۔

اس سے قبل بہت سے ایسے واقعات ہوچکے ہیں جس پر مقروض اور قرض دار آپس میں لڑے ہوں لیکن چند سو روپے کی وجہ سے کسی کی جان لینا اپنی نوعیت کا منفرد واقعہ اور قتل ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں