The news is by your side.

Advertisement

بھارتی پولیس نے جعلی مقابلے میں “ڈاکٹر” کو مار ڈالا

لکھنؤ : بھارت میں پولیس اہلکاروں نے ریمانڈ کے دوران قتل کے ملزم کو جان سے ماردیا، عدالت نے اہلکاروں کیخلاف قتل کا مقدمہ درج کرنے کا حکم دے دیا۔

گزشتہ ماہ6جنوری کو بدنام زمانہ جرائم پیشہ شخص اجیت سنگھ کو گولی مار کر ہلاک کرنے کے مقدمے میں ملوث  ملزم گردھاری وشوکرما عرف ڈاکٹر کو گرفتار کرکے عدالت میں پیش کیا گیا۔

لکھنؤ کی عدالت نے پولیس کو ملزم گردھاری وشوکرما کا ریمانڈ دے دیا تھا جس کے بعد 15فروری کو مبینہ طور  پر ملزم “ڈاکٹر” کو جعلی مقابلے میں جان سے مار دیا گیا۔

پولیس کی جانب سے عدالت کو بتایا گیا کہ ملزم نے پولیس پارٹی پر حملہ کیا اور حراست سے بھاگنے کی کوشش کی ملزم جوابی کارروائی میں مارا گیا۔

جس پر عدالت نے قتل کے ملزم کی مبینہ طور پر انکاؤنٹر میں ہلاکت کے معاملے کی تحقیقات اور پولیس اہلکاروں پر قتل کی ایف آئی آر درج کرنے کا حکم دے دیا ہے۔

عدالت نے کہا کہ سپریم کورٹ کی واضح ہدایت ہے کہ پولیس مقابلوں کے معاملے میں ایک ایف آئی آر درج کی جانی چاہیے اور پورے واقعہ کی صداقت کا پتہ لگانے کے لیے مکمل تحقیقات کی جائے۔

عدالت نے کہا کہ اس بات کی تحقیقات بھی ضروری ہیں کہ کیا پولیس ٹیم نے اپنی حفاظت کرتے ہوئے گردھاری کو گولی ماری یا ٹیم نے اپنی حفاظت سے متعلق حقوق کا غلط استعمال کیا۔

چیف جوڈیشیل مجسٹریٹ نے اپنے حکم میں کہا کہ حالانکہ پولس نے گردھاری کی پولیس حراست سے بھاگنے اور پولس پر فائرنگ کرنے کے لیے دو ایف آئی آر درج کیں لیکن اس کی موت کی وجوہات جاننے کے لیے کوئی ایف آئی آر درج کیوں نہیں کی گئی۔

واضح رہے کہ گردھاری عرف ڈاکٹر کو6 جنوری کو شہر کے مصروف علاقے گومتی نگر میں ایک جرائم پیشہ ملزم اجیت سنگھ کو گولی مارنے کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں