The news is by your side.

Advertisement

پاکستان کا پانی روکنے کے لیے، بھارت کی دریائے سندھ پر نئی نہریں بنانے کی منصوبہ بندی

نئی دہلی : لائن آف کنٹرول پرجارحیت کے ساتھ ساتھ بھارت آبی دہشتگردی پر اتر آیا، بھارت نے پاکستان کا پانی روکنے کے لئے دریائے سندھ پرنئی نہریں بنانے کی منصوبہ بندی کرلی۔


برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق بھارتی حکام کا کہنا ہے کہ دریائے سندھ کا پانی بڑی مقدار میں ذخیرہ کرنے کے لئےمغربی دریاؤں پر نہریں بنائی جائیں گی، سندھ طاس معاہدے کے تحت مقبوضہ کشمیرسے گزرنے والے دریائے سندھ،چناب اورجہلم کے پانی کا بڑا حصہ پاکستان کی ملکیت ہے۔

پاکستان پہلے ہی بھارت سے سندھ بیسن میں دو ہائیڈرو پاور پراجیکٹ کی تعمیر پر شدید تحفظات کا اظہار کرچکا ہے۔

ماہرین کے مطابق ان اقدامات سے پاکستان کو شدید خدشات لاحق ہو سکتے ہیں۔

اس سے قبل بھارت نے اپنی جانب سے دریائے چناب کا پانی روک لیا تھا، جس کے بعد پانی رکنے کے باعث ہیڈمرالہ کے مقام پر پانی کی آمد خطرناک حد تک کم ہوگئی۔


مزید پڑھیں : بھارت کی آبی دہشتگردی،دریائے چناب کا پانی روک لیا


یاد رہے کہ 13 دسمبر کو ورلڈ بینک نے سندھ طاس معاہدے پر تنازعے کے حل کے لیے غیر جانبدار ماہر یا چیئرمین عالمی ثالثی عدالت کی تقرری روکتے ہوئے پاکستان اور انڈیا کو جنوری تک کی مہلت دی تھی۔

خیال رہے کہ کروڑوں کی تعداد میں پاکستانیوں کا انحصار دریائے سندھ اور اس کے معاون دریاؤں کے پانی پر ہے

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں