site
stats
عالمی خبریں

سائبرحملے کا خطرہ، بھارت میں لاکھوں اے ٹی ایم بند

نئی دہلی: تاوان کے لیے کمپیوٹر ہیک کرنے والا وائرس دہشت کی علامت بن گیا، بھارت میں لاکھوں اے ٹی ایم بند کردیے گئے، ایک بار پھر بینکوں کے باہرلوگ رلنے لگے۔

تفصیلات کے مطابق ڈیڑھ سو سے زائد ممالک کے تین لاکھ سے زیادہ کمپیوٹروں پرحملہ کرنے والا وائرس بھارت پہنچ گیا۔ ’’وانا کرائے‘‘ نامی وائرس کے حملے سے خوف زدہ بھارتی حکام نے پرانے سوفٹ ویئر پر چلنے والے لاکھوں اے ٹی ایم بند کردیے۔

عوام نقد رقوم کے حصول کے لیے در بدر ہو گئے، بھارتی ریاستوں آندھرا پردیش، کیرالہ اورمغربی بنگال میں اے ٹی ایم بند کیے گئے ہیں۔

امکان ہے کہ مزید ریاستوں میں بھی اے ٹی ایم بند کیے جاسکتے ہیں، یہ اے ٹی ایمز ونڈوز کے پرانے ورزن پرچلتے ہیں جواس وائرس کا نشانہ ہے، یہ وائرس پھیلانے والے ہیکرز سسٹم ہیک کرکے تاوان کا مطالبہ کررہے ہیں۔

مزید پڑھیں : دنیا بھرکے کمپیوٹرز کو ہولناک سائبر حملے کاخطرہ

یاد رہے کہ یہ خطرناک وائرس ہسپتالوں، فیکٹریوں، دکانوں اور اسکولوں کے کمپوٹروں پرحملہ کرچکا ہے۔ واضح رہے کہ وانا کرائے نامی وائرس دنیا بھر کے کمپیوٹرز پر دوسرے حملے کے لئے تیار ہے۔

جمعے کو یہ وائرس جنگل کی آگ کی طرح 150 سے زائد ممالک میں کمپیوٹر سسٹمز میں پھیل گیا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top