The news is by your side.

Advertisement

بھارت کی جانب سے ستلج، راوی اورچناب میں پانی چھوڑے جانے کا امکان

لاہور: بھارت کی جانب سے آبی جارحیت کا خطرہ، دریائے راوی ، ستلج اور چناب میں آج پانی چھوڑنے کا امکان ہے، پانی چھوڑے جانے سے پنجاب میں کھڑی فصلوں کو نقصان پہنچنے کا اندیشہ ہے۔

تفصیلات کے مطابق بھارت کی جانب سے آج تین دریاؤں میں پانی چھوڑے جانے کا امکان ظاہر کیا جارہا ہے ، جس کے سبب راوی ، ستلج اور چناب میں اونچے درجے کے سیلاب کا خدشہ ہے۔یاد رہے کہ بھارت کی جانب سے ہیڈ فیروز پور کے علاقے سے پانی چھوڑا جاتا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ دریاؤں میں سیلابی کیفیت پیدا ہونے پنجاب کے مختلف علاقے متاثر ہونے کا اندیشہ ہے ، دریائے چناب میں سیلاب سےسیالکوٹ،گجرات متاثرہوسکتےہیں جبکہ گجرانوالہ ، حافظ آباد ، چنیوٹ جھنگ، مظفر گڑھ ، اورملتان بھی متاثر ہونے کا اندیشہ ہے۔

دریائے ستلج میں سیلاب سےقصور،پاکپتن ،اوکاڑہ ، وہاڑی متاثرہوسکتےہیں جبکہ بہاولپوراوربہاولنگر کے اضلاع میں بھی سیلابی پانی سے نقصان کا امکان ہے۔ دریائے جہلم میں منگلا ڈیم کے باعث کم درجے کے سیلاب کا خدشہ ہے تاہم راوی میں سیلاب سےلاہور،اوکاڑہ،ساہیوال ،ننکانہ صاحب ، ٹوبہ ٹیک سنگھ متاثرہوسکتےہیں۔

یاد رہے کہ بھارت کی جانب سے ایک عرصے سے سندھ طاس معاہدے کی خلاف ورزی کی جاتی رہی ہے، جب جب معاہدے کے تحت بھارت نے پاکستان کو پانی فراہم کرنا ہوتا ہے ، اس وقت پانی روک لیا جاتا ہے اور جب فصلیں کاشت کردی جاتی ہیں اس وقت پانی چھوڑ کر پاکستان کی زراعت کو شدید نقصان پہنچایا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں