The news is by your side.

Advertisement

بھارت: اسپتال میں بستر کے انتظار میں بچی کی کرونا سے دردناک موت

آندرا پردیش: بھارتی شہر وشاکھاپٹنم کے ایک اسپتال میں بستر کے انتظار میں کرونا انفیکشن سے بچی جان سے ہاتھ دھو بیٹھی۔

تفصیلات کے مطابق وشاکھا پٹنم کے مشہور کنگ جارج اسپتال میں منگل کے روز دل دہلانے والے مناظر دیکھنے میں آئے، ایک بچی اسپتال لائی گئی جس کی حالت نازک تھی لیکن اسپتال میں اسے داخل کرانے کے لیے بستر نہیں ملا۔

ڈیڑھ سال کی بچی جھانوکا اسپتال کے احاطے میں کرونا کی وجہ سے مر گئی، جب کہ روتے بلبلاتے والدین بچی کو بچانے کے لیے ڈاکٹروں سے التجا کرتے رہے، معلوم ہوا کہ بچی کو نزلہ ہونے پر پہلے ایک نجی اسپتال لے جایا گیا تھا۔

بچی کے والد ویرا بابو نے بتایا کہ نجی اسپتال میں ان کی بچی کا تین دن تک علاج چلتا رہا، تین دن کے بعد ڈاکٹرز نے کرونا کا شک ظاہر کیا اور پی سی آر ٹیسٹ کرنے کا مشورہ دیا، رپورٹ مثبت آنے پر سرکاری اسپتال کے جی ایچ لے جانے کا مشورہ دیا گیا۔

کرونا سے موت، 2 روز تک بچی باپ کی لاش کے ساتھ رہی، لرزہ خیز واقعہ

بچی کے والدین نے الزام لگایا کہ ان کی بچی بچ جاتی اگر ڈاکٹرز ایمرجنسی میں مناسب علاج کرتے، دوسری طرف اسپتال انتظامیہ کا کہنا تھا کہ بچی اسپتال پہنچنے کے وقت سے پہلے ہی تشویش ناک حالت میں تھی۔

بچی کے مرنے پر اسپتال میں لواحقین نے ہنگامہ آرائی کی، اور اسپتال انتظامیہ کو بچی کی موت کا ذمہ دار قرار دیتے رہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں