The news is by your side.

Advertisement

بھارتی انتخابات: فن کاروں کے بعد سائنس داں بھی نریندر مودی کے خلاف اٹھ کھڑے ہوئے

دہلی: بھارتی انتخابات قریب آتے ہی مودی پر تنقید میں اضافہ ہوگیا، مصوروں اور فن کاروں کے بعد اب سائنس داں بھی مودی کے خلاف اٹھ کھڑے ہوئے.

تفصیلات کے مطابق بھارت کا پڑھا لکھا طبقہ مودی کی پالیسیوں کےخلاف سوشل میڈیا پر متحرک ہوگیا. ریلیوں اور جلسوں کی صورت بھی احتجاج کا سلسلہ جاری ہے.

باشعور طبقے کا یہی موقف ہے کہ نفرت کی سیاست کرنے والوں کو ووٹ نہ دیا جائے، متعصبانہ پالیسیوں کو رد کر دیا جائے.

ظلم، جبر اور مذہبی فسادات کو ہوا دینے پرمودی کے خلاف سائنس دانوں نے بھی عوام سے اپیل کی کہ عوام میں مذہب، ذات اور زبان میں تفریق کرنے والوں کو ووٹ ہرگزنہ دیں۔

خیال رہے کہ بالی وڈ فن کار نصیرالدین شاہ، رتنا پاتھک، کالچی کوچلن سمیت سات سو سے زائد فلم، ٹی وی اور تھیٹر اداکاروں نے مودی کو ووٹ نہ دینے کی اپیل کی تھی.

مزید پڑھیں: نریندر مودی کی بالی وڈ کو یرغمال بنانے کی کوشش کو بڑا دھچکا

جب پریش راول اور انوپم کھیر جیسے مودی کے حامیوں‌ نے انڈسٹری کے رویے پر سوالات اٹھائے، تو انھیں سخت ردعمل کا سامنا کرنا پڑا.

تجزیہ کاروں‌ کا خیال ہے کہ باشعور طبقے کا ردعمل الیکشن کے نتائج پر اثر انداز ہوسکتا ہے.

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں