The news is by your side.

Advertisement

دفتر خارجہ میں بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر کی طلبی

اسلام آباد: گزشتہ روز لائن آف کنٹرول پر بھارت کی اشتعال انگیزی کے خلاف دفترخارجہ میں بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر کو طلب کرلیا گیا۔ بھارتی جارحیت کے باعث گزشتہ روز 2 خواتین جاں بحق جبکہ 6 افراد زخمی ہوگئے تھے۔

سفارتی ذرائع کے مطابق گزشتہ روز لائن آف کنٹرول پر بھارت کی اشتعال انگیزی کے خلاف دفترخارجہ میں بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر کو ڈی جی ساؤتھ ایشیا و سارک ڈاکٹر محمد فیصل کی جانب سے طلب کیا گیا۔

مزید پڑھیں: بھارتی جارحیت سے 2 خواتین شہید، 6 افراد زخمی

بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر کی دفتر خارجہ میں طلبی کے موقع پر بھارتی اشتعال انگیزی پر سخت احتجاج کیا گیا۔ ڈپٹی ہائی کمشنر کو احتجاجی مراسلہ بھی دیا گیا۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز بھارتی فوج نے ایک بار پھر جارحیت کا مظاہرہ کرتے ہوئے لائن آف کنٹرول پر سیز فائر کی خلاف ورزی کی اور مقامی آبادی پر بلا اشتعال فائرنگ اور گولہ باری کی۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کے مطابق بھارت نے لائن آف کنٹرول پر نوکوٹ اور قیصر کوٹ گاؤں کو نشانہ بنایا اور مقامی آبادی پر فائرنگ اور گولہ باری کی جس کی وجہ سے 8 افراد زخمی ہوگئے جنہیں طبی امداد کے لیے قریبی اسپتال منتقل کیا گیا۔

بعد ازاں زخمیوں میں شامل 2 خواتین سمیرا یونس اور مریم دوران علاج دم توڑ گئیں۔

آئی ایس پی آر کا کہنا تھا کہ پاک فوج نے بھارتی جارحیت کا منہ توڑ جواب دیتے ہوئے جوابی کارروائی میں 4 بھارتی چوکیاں تباہ کردیں جس سے بھارتی بندوقیں خاموش ہوگئیں۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں