The news is by your side.

افغانستان میں بھارتی سفارتخانہ خاموشی سے کھول دیا گیا

امریکا اور افغان جنگ کی بندش کے بعد وہاں سے جان بچا کر بھاگنے والے بھارتی سفارت کار اب خاموشی سے واپس افغانستان پہنچنا شروع ہوگئے۔

افغان میڈیا کے مطابق بھارت نے بغیر کسی باضابطہ اعلان کے خاموشی سے کابل میں اپنا سفارت خانہ دوبارہ کھول لیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق بھارت نے ایک بار پھر افغانستان میں اپنی سفارتی موجودگی کے لیے ماہرین کی ایک ٹیم کابل بھیج دی ہے، اس ٹیم نے گزشتہ سال ہونے والا بھارت کا سفارت خانہ ایک بار پھر فعال کردیا ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق حالیہ ہفتوں میں افغانستان میں برسرِ اقتدار طالبان اور نئی دہلی کے درمیان پسِ پردہ کئی ملاقاتیں اور اجلاس ہوئے ہیں، جس کے بعد بھارتی حکام کے کابل واپس جانے کی راہ ہموار ہوئی ہے۔

بھارت کی ماہرین پر مبنی ٹیم جمعرات کو کابل پہنچی ہے، اس حوالے سے بھارت کی وزارتِ خارجہ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ یہ ٹیم سفارت خانے بھیجی گئی ہے۔

بھارت کے وزارتِ خارجہ نے کہا کہ اس ٹیم کا کام انسانی بنیادوں پر امداد کی فراہمی کی نگرانی کرے گی اور اس حوالے سے کام کرنے والے اداروں کے درمیان ربط قائم کرنے میں اپنا کردار ادا کریں گی۔

بھارت کے وزارتِ خارجہ نے کہا کہ اس اقدام کو افغان عوام سے تاریخی تعلقات اور رابطوں کا تسلسل ظاہر کر رہا ہے، تاہم اس کا یہ مطلب نہیں ہے کہ بھارت افغانستان میں طالبان کی حکومت کو تسلیم کرنے جا رہا ہے۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق بھارت کے ماہرین کی ٹیم ایئر فورس کے طیارے میں کابل پہنچی تھی، اس طیارے میں افغانستان میں آنے والے حالیہ زلزلے سے متاثرہ افراد کے لیے امداد بھی تھی۔

واضح رہے کہ اگست 2021 میں کابل پر طالبان کے قبضے کے دوران نئی دہلی نے افغان دارالحکومت کابل میں سفارت خانے سمیت ہرات، قندھار، جلال آباد اور مزار شریف میں اپنے قونصل خانے بند کر دیے تھے اور وہاں سے عملہ واپس بلا لیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں