The news is by your side.

Advertisement

بھارت میں ایک اور کسان نے موت کو گلے لیا

کرناٹک : بھارت میں زرعی قوانین کیخلاف کسان تحریک زوروں پر ہے، اس دوران ایک 45 سالہ کسان نے اپنے قرض سے تنگ آکر موت کو گلے لگا لیا۔

تفصیلات کے مطابق بھارتی ریاست کرناٹک کے ضلع یادگیر کے تعلقہ شاہ پور میں ایک کسان نے قرض خواہوں سے تنگ آکر زہریلی دوا پی کر خودکشی کرلی۔

بھارتی میڈیا سے ملنے والی اطلاعات کے مطابق 45 سالہ کسان نے گزشتہ روز اپنے کھیت میں جاکر جراثیم کش زہریلی دوا پی لی اور وہیں تڑپ کر جان دے دی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ کسان نے کھیتی باڑی کے لیے مقامی بینک سے ساٹھ ہزار روپے، سوسائٹی سے 15000، خانگی فائنانس سے دو لاکھ پچاس ہزار روپے قرض لیے تھے۔

گذشتہ دو سال سے مسلسل فصلوں کے نقصانات کے سبب وہ اپنے قرض کی ادائیگی نہیں کر پارہا تھا اور قرض خواہ اس پر دباؤ ڈال رہے تھے۔

ان حالات سے مایوس ہوکر کسان نے خودکشی کرنے کا انتہائی اقدام اٹھالیا۔اس حوالے سے شاہ پور پولیس اسٹیشن میں مقدمہ درج کرلیا گیا ہے اور مزید تفتیش جاری ہے۔

واضح رہے کہ سال2019 میں نیشنل کرائم ریکارڈ بیورو کی جانب سے جاری کردہ رپورٹ کے مطابق مہاراشٹر کے بعد کرناٹک میں کسان سب سے زیادہ خودکشی کرتے ہیں۔ سال2019 میں ریاست میں تقریبا 1992 کسانوں اور زرعی مزدوروں نے خودکشی کی تھی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں