The news is by your side.

Advertisement

اداکارہ سمیت کئی شاگردوں سے غیر اخلاقی حرکات، بھارتی فلمساز گرفتار

ممبئی: بھارت سے تعلق رکھنے والے بنگالی فلمساز اور تھیٹر کے استاد سدپتو چیٹرجی کو پولیس نے خواتین سے نازیبا حرکات کے الزام میں گرفتار کرلیا۔

بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق سدپتو چیٹرجی کے خلاف اُن کی اپنی ہی شاگردوں نے مقدمہ درج کرایا اور مؤقف اختیار کیا کہ فلمساز نے انہیں جنسی ہراسانی کا نشانہ بنایا۔

نوجوان اداکاارؤں کی جانب سے 2 ایف آئی آرز درج ہونے کے بعد پولیس نے فلمساز کے کولکتہ میں واقع رہائش گاہ پر چھاپہ مارا اور انہیں حراست میں لے کر تھانے منتقل کردیا۔

حکام کے مطابق سدپتو چیٹرجی کو ہفتے کے روز عدالت میں پیش کیا گیا جہاں جج نے انہیں مزید تفتیش کے لیے دو روزہ جسمانی ریمارنڈ پر پولیس کے حوالے کردیا۔

مزید پڑھیں:  اسکالرطارق رمضان پر جنسی ہراسگی کے الزام میں فرد جرم عائد

رپورٹ کے مطابق سدپتوچیٹرجی کے خلاف ایک ایف آئی آر 20 سالہ نوجوان اداکارہ نے درج کرائی اور مؤقف اختیار کیا کہ ’میں نے اتنی ہمت پیدا کرلی کہ اپنے ساتھ پیش آنے والے واقعے پر بات کر سکوں اور دنیا کو آگاہ کرسکوں کہ مجھے معروف شخصیت پروفیسر سدپتو نے جنسی ہراساں کیا‘۔

اداکارہ نے بتایا کہ مسٹر چیٹرجی اُس ادارے میں پڑھاتے ہیں جہاں سے میں تعلیم حاصل کررہی ہوں۔ ایک اور اداکارہ نے مؤقف اختیار کیا کہ فلم ساز نے انہیں مرکزی کردار دینے کے بعد شوٹ کے دوران جنسی ہراساں کیا۔

بھارتی میڈیا رپورٹ کے مطابق چیٹر جی نامور ڈرامہ ٹیچر تھے اور انہیں لیجنڈری فلمساز سمجھا جاتا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں