مقبوضہ کشمیرمیں کشیدگی کا31 واں روز،شہداء کو پیلٹ گن سے نشانہ بنایا گیا -
The news is by your side.

Advertisement

مقبوضہ کشمیرمیں کشیدگی کا31 واں روز،شہداء کو پیلٹ گن سے نشانہ بنایا گیا

سری نگر: مقبوضہ کشمیر جاری کشیدگی 31 روز گذرنے کے باوجود کم نہیں ہوئی،سری نگر کے علاقےشوپیاں میں پیلٹ گن کا نشانہ بننے والا 17 سالہ طالب علم عامر بشیر لون زیست و موت کی جنگ لڑرہا ہے۔

تفصیلات کے مطابق بھارتی درندگی کے خلاف جمعہ کو پُرامن مظاہرہ کیا جا رہا تھا کہ بھارتی فوجیوں نے پیلٹ گن سے اندھا دھند فائرنگ کردی جس کےباعث پیلٹ گن کے درجنوں چَھرے عامر بشیر کی کھوپڑی اور دماغ میں جا گھسے۔

یہ خبر پڑھیں : بھارتی فوج کی بربریت،تین حریت پسند شہید

انہیں فوری طور پر سری نگر کے اسپتال منتقل کیا جائے جہاں ماہر نیورولوجسٹ کا کہنا ہے کہ پیلٹ گن کے چھرے لگنے سے نوجوان عامر بشیر لون ”پیرالائیس” ہو گئے ہیں وہ آئی سی یو میں زیر علاج ہیں اور موت و زندگی کی جنگ لڑ رہے ہیں۔

اسی سے متعلق : نہتے کشمریوں پر پیلٹ گن کے استعمال کے خلاف فیس بک پر مہم کا آغاز

عامر کے اہل خانہ،دوست اور کشمیری نوجوان اسپتلا کے باہر موجود ہیں اور آزادی کشمیر کے حق میں نعرے بلند کر رہے ہیں جب کہ عامر کے والدین نے عالمی اداروں سے بھارتی فوج کی جانب سے پیلٹ گن کے استعمال کا نوٹس لینے کی اپیل کی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : مقبوضہ کشمیر: کرفیوکا29واں روز، بھارتی فورسزکے ہاتھوں مزید 4کشمیری

واضح رہے ایک ماہ قبل کشمیری حریت پسند نوجوان رہنما برہان وانی کی شہادت کے بعد سے پورے کشمیر میں کشیدگی تاحال جاری ہے، کشمیری عوام بھارتی فوج کے خلاف سراپا احتجاج ہیں جب کہ کئی شہروں میں کرفیو نافذ ہے اور مواصلاتی ذرائع بہ شمول ٹیلی فون،موبائل اور نیٹ سروس پر بھی بندش جاری ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں