کوہاٹ میں بھارتی شخص کوجاسوسی کےجرم میں تین سال قید کی سزا -
The news is by your side.

Advertisement

کوہاٹ میں بھارتی شخص کوجاسوسی کےجرم میں تین سال قید کی سزا

پشاور: خیبرپختونخوا کے علاقے کوہاٹ سے 3 سال قبل لاپتہ ہونے والے ہندوستانی شہری کو جاسوسی کے الزام میں 3 سال قید کی سزا سنائی گئی ہے۔

حکام کے مطابق حامد نہال انصاری نامی شخص پرکوہاٹ میں ملٹری عدالت میں دو روز قبل فرد جرم عائد کی گئی جس کے بعد اسے پشاور کی سینٹرل جیل منتقل کردیا گیا تاہم مجرم کو پاکستان آرمی ایکٹ کے تحت اپیل کا حق حاصل ہے۔

ذرائع کے مطابق مجرم نے اعتراف کیا کہ وہ جاسوسی کے لیے افغانستان سے غیرقانونی طریقے سے پاکستان میں داخل ہوا تھا۔

ذرائع کا کہنا تھا کہ حامد نہال انصاری کے فیس بک پر 7 مختلف کاؤنٹس موجود ہیں جبکہ وہ 30 کے قریب ای میل ایڈریسز بھی استعمال کرتا تھا، اس کے قبضے سے حساس دستاویزات بھی برآمد کی گئی تھیں۔

واضح رہے کہ گزشتہ ماہ وزارت دفاع نے پشاور ہائی کورٹ کو بتایا تھا کہ حامد نہال انصاری پاک فوج کی تحویل میں ہے اور اس کے خلاف کورٹ مارشل میں ٹرائل جاری ہے۔

خیال رہے کہ مذکورہ تفصیلات کی فراہمی کے بعد عدالت نے 13 جنوری کو حامد نہال انصاری کی والدہ کی جانب سے ان کے بیٹے کی غیرقانونی حراست کے حوالے سے دائر پٹیشن کو خارج کردیا تھا۔

حامد نہال انصاری کی عمر 31 سال ہے اور مجرم نے ایم بی اے کی ڈگری حاصل کررکھی ہے، وہ ممبئی مینجمنٹ کالج میں استاد بھی رہا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں